الطاف حسین یونیورسٹی حیدر آباد کا سنگ بنیاد،یونیورسٹی 80ایکڑز مین پر مشتمل ،2ارب روپے لاگت آئیگی

الطاف حسین یونیورسٹی حیدر آباد کا سنگ بنیاد،یونیورسٹی 80ایکڑز مین پر مشتمل ...

  



 حیدرآباد(خصوصی رپورٹ)بحریہ ٹاؤن نے حیدرآباد میں الطاف حسین یونیورسٹی کا سنگِ بنیاد رکھ دیا۔ تقریب کے مہمان خصوصی گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد اور ملک ریاض حسین تھے اور بحریہ ٹاؤن کے گارڈ محمد اعجاز نے تختی کی نقاب کشائی کی جبکہ قائد متحدہ قومی موومنٹ الطاف حسین نے بھی تقریب سے ٹیلیفونک خطاب کیا اور ملک ریاض حسین کو زبردست الفاظ میں خراجِ تحسین پیش کیا۔ اس موقع پر شہر کے مقامی لوگوں کے ساتھ ساتھ معروف اور مشہور تمام شعبہ ہاے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد کی کثیر تعداد نے شرکت کی ۔اس یونیورسٹی کا ڈیزائن دنیا کے مشہور آرکیٹیکٹ نئیر علی دادا نے بنایا ہے ۔ملک ریاض حسین نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میں الطاف بھائی کی خواہش پر گورنر ہاؤس ہاکی ٹیم کی حوصلہ افزائی کے لئے گیا تھا جہاں گورنر صاحب پریشان پایا اور استفسار کرنے پر معلوم ہوا کہ الطاف بھائی کی دیرینہ خواہش ہے کہ حیدرآباد میں کوئی یونیورسٹی بنے مگر معاملہ کھٹائی میں ہے ۔ میں نے فوراََ اس عزم کا اعادہ کیا کہ یونیورسٹی میں بنواؤں گا اور میں فوراََپیپلز پارٹی کے شریک چےئرپرسن آصف زرداری سے ملاقات کے لئے گیا اور انکو صورتحال سے آگاہ کیا جنہوں نے کھلے دل کا مظاہرہ کرتے ہوئے نہ صرف مکمل تعاون کا یقین دلایا بلکہ اس کے لئے زمین بھی حکومتِ سندھ سے مفت عطیہ کروانے کی یقین دہانی کروائی مگر ہم نے مارکیٹ ریٹ سے زیادہ رقم یعنی 40 کروڑ روپے ادا کر کے یہ زمین خریدی ہے۔ انہوں نے کہا کہ یونیورسٹی میں تمام قومیتوں کے لوگ تعلیم حاصل کریں گے اور یہاں الطاف حسین کے نام پر 50 میرٹ سکالر شپس بھی بحریہ ٹاؤن سپانسر کرے گا ۔ جس پر الطاف حسین نے جواباََ ان سکالر شپس کو میرٹ پہ دینے کے لئے ایک کمیٹی بنانے کا اعلان کر دیاانہوں نے خواہش ظاہر کی کہ ان کو رئیل اسٹیٹ ٹائیکون کی بجائے ویلفئیر ٹائیکون کے طور پر یاد رکھا جائے ۔ انہوں نے مزید بتایا کہ ابتدائی مرحلہ کی 50 ایکڑ زمین کو بڑھا کر 80 ایکڑ محض اس لئے خریدا گیا ہے تا کہ اس کے ساتھ ساتھ سیکنڈری سکول، میڈیکل کالج او ر ورلڈ کلاس ہسپتال بھی بنایا جائے گا۔ اس پر الطاف بھائی نے کہا کہ یہ سہولیات حیدرآباد کو ایک نیا اور جدید شہر بنا دیں گی ملک ریاض نے کہا کہ دنیا میں تمام بڑے شہر یونیورسٹیوں نے ہی بنائے اور آباد کئے ہیں۔ انہوں نے حیدرآباد میں ایک ماہ کے اندر پانچ بحریہ دسترخوان کھولنے کا بھی عندیہ دیا جس پر الطاف حسین نے کہا کہ ملک صاحب آج سے حیدرآباد آپ کا ہے آپ کے تمام اقدامات کی ہم بھرپور حمایت کرتے ہیں اور اپنے ورکرز کو فوری ہدایات جاری کیں کہ ملک صاحب کی خواہشات کے مطابق پلان بنایا جائے تاکہ یہ پلان جلد از جلد مکمل ہو سکے۔ملک ریاض حسین نے\" الطاف حسین انشیٹیو برائے سیف اینڈ کلین ڈرنکنگ واٹر\" کا بھی اعلان کیا جس کو سب نے سراہا۔ الطاف حسین یونیورسٹی میں فارمیسی ، میڈیکل ، سکول آف بزنس، انفارمیشن ٹیکنالوجی، ماس کمیونیکیشن سمین تمام شعبہ جات میں تعلیم دی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ یورپی اور مغربی ممالک نے صرف اور صرف تعلیم کے زور پر ہی ترقی کی ہے۔امریکا میں دس لاکھ شہریوں میں سے 4 ہزار اور جاپان کے دس لاکھ میں 5 ہزار نوجوان سائنس دان بنتے ہیں جبکہ اسلامی دنیا کے 21 لاکھ لوگوں میں سے صرف 230 لوگ سائنس کی تعلیم حاصل کر پاتے ہیں ،میں نے واشنگٹن پوسٹ میں بل گیٹس کی آخری تقریر پڑھی تو میری آنکھوں میں بھی آنسو آگئے، آپ ذرا سوچئے خیرات ، صدقہ اور فلاح و بہبود اسلام میں عبادت کی حیثیت رکھتی ہے لیکن دنیا کے سب سے بڑے مخیر کا اعزاز کسی مسلمان کو نصیب نہ ہوا، دنیا کے امیر ترین لوگوں کی فہرست میں تین مسلمان بھی شامل تھے لیکن لوگوں کی خدمت کرنے کی سعادت اللہ تعالیٰ نے بل گیٹس کو عطا فرمائی۔ امریکا اور یورپ بل گیٹس جیسے لوگوں کی وجہ سے ہم پر غالب ہیں ۔ یورپ اور امریکا کے پاس بڑے انسان ہیں جبکہ عالم اسلام بڑے تاجروں بڑے بیوپاریوں اور بڑے صنعتکاروں کی غلاموں کی زندگی گزار رہا ہے۔ قائد تحریک الطاف حسین نے اس موقع پر خصوصی ٹیلیفونک خطاب کیا اور حیدر آباد کے لوگوں کو ان کے دیرینہ مطالبے کی منظوری پر مبارکباد دیتے ہوئے ملک ریاض حسین کو زبردست الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا۔ انہوں نے کہا کہ وہ سمجھتے ہیں کہ ملک ریاض حسین کی شکل میں اللہ نے فرشتہ گورنر کے پاس بھیجا ہے انسان اپنے دل سے امیر ہوتا ہے اگر ملک ریاض جیسے 10-15 سخی لوگ اور پیدا ہو جا ئیں تو یہ ملک لندن اور پیرس بن جائے ۔ انہوں نے کہا کہ اس یونیورسٹی میں ذات پات اور قومیتوں کی بنیاد پر کوئی تفریق نہیں ہو گی۔ جو بھی حیدرآباد میں رہتا ہے وہ کوئی بھی زبان بولتا ہو اگر وہ میرٹ پر پورا اترتا ہے تو یہ یونیورسٹی اس کی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس یونیورسٹی پر داخلہ کا واحد معیار میرٹ ہے میرٹ کے بغیر میرے سگے رشتہ دار بھی اس یونیورسٹی میں داخلہ نہیں لے سکیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ 50 اسکالر شپس بورڈبنا کر میرٹ پر دی جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ میری ملک صاحب سے کبھی ملاقات نہیں ہوئی مگر میں سمجھتا ہوں کہ اللہ نے مجھے صاحب ثروت روحانی بھائی دے دیا ہے۔ اس موقع پر الطاف حسین آبدیدہ ہو گئے اور کہا کہ میرے پاس الفاظ نہیں ہیں میں بناوٹی مقرر نہیں ہوں مجھے نہیں پتہ کہ تعریف کیسے کی جاتی ہے مگر میں دل سے کہہ رہا ہوں کہ میں ملک صاحب کا ازحد مشکور ہوں حیدرآباد کے لوگوں آپ کا شہر آباد ہونے جا رہا ہے سب کو مبارک اور سب دل سے دعا کریں کہ یہ کار خیر عافیت سے مکمل ہو۔

مزید : صفحہ اول