ہائی کورٹ کا انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کی کارکردگی پر اظہار اطمینان

ہائی کورٹ کا انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کی کارکردگی پر اظہار اطمینان
ہائی کورٹ کا انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کی کارکردگی پر اظہار اطمینان

  



لاہور(نامہ نگار خصوصی ) لاہور ہائی کورٹ نے پولیس حکام کو ہدایت کی ہے کہ تمام مفرور ملزموں کو گرفتار کرکے جلد از جلد مقدمات کی تفتیش مکمل کی جائے جبکہ انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کی کارکردگی پر اطمینان کا اظہار کیا ہے ۔

انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کے نگران جج مسٹر جسٹس منظور اے ملک اور عدالت عالیہ کے سینئر جج مسٹر جسٹس سردار طارق مسعود نے یہ ہدایات انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کے تمام ججوں اور پولیس افسروں کے مشترکہ اجلاس کے دوران جاری کیں ۔اجلاس میں انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کے ججوں کے علاوہ ایڈیشنل سیکرٹری پراسیکیوشن ، انسپکٹر جنرل جیل خانہ جات ،ایڈیشنل آئی جی (انوسٹی گیشن )،ڈی آئی جی (کرائم )،پنجاب فرانزک سائنس ایجنسی کے ڈائریکٹر (ایڈمن) اور تمام ریجنل پولیس افسروں نے شرکت کی ۔فاضل جسٹس صاحبان نے انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کی کارکردگی کا جائزہ لیا اور ان عدالتوں کی کارکردگی پر اطمینان کا اظہارکرتے ہوئے انہیں ہدایت کی کہ قانون کی منشا کے مطابق مقدمات کے جلد فیصلے کئے جائیں ۔جسٹس صاحبان کو بتایا گیا کہ انسداد دہشت گردی کے قانون کے تحت درج مقدمات کے چالان بروقت پیش نہیں کئے جاتے جبکہ ان مقدمات کے درجنوںملزم مفرور ہیں ۔جسٹس منظور اے ملک اور جسٹس سردار طاق مسعود نے تفتیش اور ملزموںکی گرفتاریوں کے لئے سرتوڑ کوششوں کی ضرورت پر زور دیا ،اس حوالے سے پولیس حکام اور استغاثہ کو کارکردگی بہتر بنانے ،مقدمات کی بروقت تفتیش مکمل کرنے اور اشتہاری و مفرور ملزموں کی گرفتاری کی ہدایات جاری کی گئی ہیں ۔اجلاس میں موجود انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کے ججوں اور پولیس افسروں نے یقین دلایا کہ ان ہدایات پر بھرپور انداز میں عمل کیا جائے گا

مزید : جرم و انصاف


loading...