کالے قانون کے نفاذ کی مذمت ،حکومت انتقام گیری کی پالیسی پر گامزن ہے ،سید علی گیلانی

کالے قانون کے نفاذ کی مذمت ،حکومت انتقام گیری کی پالیسی پر گامزن ہے ،سید علی ...

سرینگر(اے این این ) تحریک حریت چیرمین سید علی گیلانی صاحب تنظیم کے لیڈروں عبدالغنی بٹ سوپور، عبدالسبحان وانی اور کارکنان محمد افضل بٹ اور ظفر الاسلام پر پھر سے کالے قانون پی ایس اے کے نفاذ کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے انسانیت اور اخلاقیات کے تمام پہلووں کا جنازہ نکالا ہوا ہے۔ اب یہ حکومت صرف انتقام گیری سے کام لے کر بھارت کی خوشنودی حاصل کررہی ہے اور جموں کشمیر کے عوام کو عذاب وعتاب میں مبتلا کرنے کی ذمہ داری ہے۔ گیلانی نے کہا کہ جن لوگوں کو 2016 کی عوامی تحریک کے دوران گرفتار کیا گیا ان پر چوتھی بار پی ایس اے لگانا حکومت کی بوکھلاہٹ ہے۔ عبدالغنی بٹ اور عبدالسبحان وانی سوپور عمر رسیدہ ہونے کے ساتھ ساتھ مختلف عارضوں میں مبتلا ہیں آج ان پر چوتھی بار پبلک سیفٹی ایکٹ لگاکر عبدالغنی بٹ کو کوٹ بھوال، عبدالسبحان وانی کو کپواڑہ، جبکہ محمد افضل بٹ اور ظفر الاسلام کو بھی کوٹ بھلوال جیل منتقل کیا گیا۔ دریں اثنا اسلامی تنظیم آزادی کے سربراہ عبدالصمد انقلابی کے اہل خانہ کے مطابق موصوف پر متواتر تیسرا پبلک سیفٹی ایکٹ لاگو کیا گیا۔

معلوم رہے کہ وہ فی الوقت سرینگر سنٹرل جیل میں مقید ہیں اور کافی عرصہ سے بیمار ہیں۔

مزید : عالمی منظر


loading...