افغان طالبان ور تمام دھڑے سیاسی مفاہمتی عمل میں شریک ہو جائیں : اعزاز چودھری

افغان طالبان ور تمام دھڑے سیاسی مفاہمتی عمل میں شریک ہو جائیں : اعزاز چودھری

نیویارک (مانیٹرنگ ڈیسک )امریکا میں تعینات پاکستانی سفیر اعزاز چوہدری نے بیرون ملک پاکستان مخالف مہم پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ جنہوں نے کراچی کا امن تباہ کیا، وہی پیسے لے کر فری کراچی مہم چلا رہے ہیں ۔ افغانستان میں امن کے لیے عسکری کے بجائے سیاسی لائحہ عمل ہونا چاہیے۔ہم چاہتے ہیں کہ افغان طالبان اور تمام دھڑے ایک سیاسی اور مفاہمتی عمل میں شریک ہوجائیں۔اعزاز چوہدری کا کہنا تھا کہ حقانی نیٹ ورک اور طالبان کے جنگجو افغان شہری ہیں اور ان کو کہہ دیا گیا ہے کہ وہ پاکستان سے نکل جائیں۔نجی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے اعزاز چوہدری کا کہنا تھا کہ اگر چند شرپسند عناصر باہر کے کسی ذرائع سے پیسے لے کر دو چار ٹیکسیوں پر اپنا اشتہار لگاتے ہیں تو وہ وہاں کے عوام کی کوئی نمائندگی نہیں کررہے۔میں گزارش کروں گا کہ اس طرح کے دباؤ کو دباؤ نہ سمجھا جائے، یہ دباؤ نہیں ہے، یہ لوگ اپنے منہ کی کھا رہے ہں اور بے نقاب ہورہے ہیں۔ان کو کیا پتہ کہ اس وقت کراچی میں کیا ہو رہا ہے، کراچی پرامن ہوچکا ہے اور یہاں بزنس پھل پھول رہا ہے۔یہ وہی لوگ ہیں جنہوں نے کراچی کا امن برباد کیا تھا اور آج یہ کراچی کے حقوق کے لیے اٹھ کر آگئے ہیں۔

اعزاز چودھری

مزید : علاقائی


loading...