سانحہ سیالکوٹ جیل کے شہدا کے ورثا کو ان کا حق دیا جائے گا: جسٹس منصور علی شاہ

سانحہ سیالکوٹ جیل کے شہدا کے ورثا کو ان کا حق دیا جائے گا: جسٹس منصور علی شاہ

سیالکوٹ(بیورورپورٹ)چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مسٹرجسٹس سید منصور علی شاہ نے کہا ہے کہ سانحہ ڈسٹرکٹ جیل سیالکوٹ میں شہید ہونے والے ججز نے فرائض منصبی کی انجام دہی کے دوران جامِ شہادت نوش کیا ان کو ناصرف شہید کے اعزاز سے نوازا جائے گا بلکہ شہداء کے ورثاء کو انصاف سمیت شہید کے تمام بینیفٹ کی جلد فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے اقدامات کئے جائیں گے۔ یہ بات انہوں نے ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج سیالکوٹ کے احاطہ میں 25جولائی 2003ء کو ڈسٹرکٹ جیل کے انسپکشن وزٹ کے دوران جام شہادت نوش کرنے والے جج صاحبان کی یاد میں تعمیر کی جانے والی یادگار شہداء کے افتتاح کے بعد تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ رجسٹرار لاہور ہائیکورٹ خورشید انور رضوی، ڈائریکٹر جنرل ڈسٹرکٹ جوڈیشری پنجاب محمد اکمل خان، ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج سیالکوٹ ملک علی ذوالقرنین اعوان،ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نارروال محمد یوسف اوجلہ، ڈپٹی کمشنر سیالکوٹ ڈاکٹر فرخ نوید، ڈی پی او اسد سرفراز، صدر ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن سیالکوٹ خواجہ حافظ ظفر الحق اور سینئر سول جج ایڈمن شاہد حمید کے علاوہ سانحہ ڈسٹرکٹ جیل سیالکوٹ میں شہید ہونے والے جج صاحبان کے ورثاء بھی موجود تھے ۔جسٹس سید منصور علی شاہ نے یادگار شہداء کی دیر سے تعمیر اور افتتاح پر معذرت کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ یہ کام 2003ء میں ہی ہوجانا چاہئے تھا۔ انہوں نے شہداء کے ورثاء کی تقریب میں شرکت پر ان کا شکریہ ادا کیا اور ان کیلئے فاتحہ خوانی کی اوردعا کی۔ انہوں نے کہا کہ شہداء انصاف کے ورثاء کو ان کو حق دیا جائے گا ، بار اور بینچ ایک دوسرے کا لازم و ملزوم حصہ ہیں ۔ ڈسٹرکٹ اینڈسیشن جج نارروال محمد یوسف اوجلہ نے 25جولائی 2003ء کے المناک واقعہ کی تفصیل بیان کرتے ہوئے بتایا کہ شاہد منیر رانجھا، صغیر انور چودھری،آصف ممتاز چیمہ اور سید شہر یاربخاری جرأت اور بہادری سے شہادت کو گلے سے لگایا اور آخری وقت تک نہیں گھبرائے اور اس سانحہ کے دوران کسی بھی لمحہ پر کمزوری کا مظاہرہ نہیں کیا۔ انہوں نے چیف جسٹس سے مطالبہ کیا کہ بہادر شہداء انصاف کو تغمہ شجاعت سے نوازا جائے اور ان کو شہید کا ٹائٹل دینے کے علاوہ ان کے ورثاء کیلئے ماہانہ پنشن /وظیفہ کا اجراء کیا جائے ۔ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج سیالکوٹ ملک علی ذوالقرنین اعوان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شہداء انصاف کے ورثاء کی تقریب میں شرکت پر انہیں خوش آمدید کہااور سانحہ ڈسٹرکٹ جیل سیالکوٹ میں شہید ہونے والے ججز کو خراج عقیدت پیش کیا ۔ اجلاس سے صدر ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن سیالکوٹ خواجہ حافظ عرفان الحق نے بھی خطاب کیا ۔جسٹس سید منصور علی شاہ نے یادگارِ شہداء انصاف کا افتتاح اور پھول چڑھائے اور پولیس کے چاک و چوبند دستے نے سلامی پیش کی ۔ انہوں نے جوڈیشری سٹاف سے ملاقات کے دوران انہیں تلقین کی کہ وہ اپنی وردی کی لاج رکھیں اور ادارے کو ماں کا درجہ دیں اور اس کی عزت و تکریم میں اضافہ کا باعث بنے ۔

مزید : صفحہ آخر


loading...