2018ء کا الیکشن یزیدی اور حسینی قوتوں کے درمیان ہو گا: اشرف جلالی

2018ء کا الیکشن یزیدی اور حسینی قوتوں کے درمیان ہو گا: اشرف جلالی

لاہور (ایجوکیشن رپورٹر) اتنی بڑی تعداد میں اور روزانہ اپنے آپ کو گرفتاریوں کے لئے پیش کرکے عاشقان رسول ﷺایک نئی تاریخ رقم کر رہے ہیں ۔ان عاشقانِ رسول ﷺ نے مادہ پرستی کے دور میں ثابت کر دیا ہے کہ تحفظ ختم نبوت ہمیں ہرشئی سے زیادہ عزیز ہے ان خیالات کا اظہار تحریک لبیک یارسول اللہﷺکے چیئرمین ڈاکٹر اشرف آصف جلالی نے پنجاب اسمبلی کے سامنے فیصل چوک میں ختم نبوت پر عملدرآمد کے سلسلہ میں جیل بھرو تحریک کے چوتھے دن خطاب کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا تحریک لبیک یارسول اللہﷺاذان کربلا کی وارث ہے کسی یزید یا ابن زیاد کی حمایت نہیں کر سکتی 2018 ء کا الیکشن یزیدی قوتوں اور حسینی قوتوں کے درمیان ہو گا ۔انہوں نے کہا کہ ختم نبوت کے ایشو پر احتجاجی طور پر مستعفی ہونے والے ارکان اسمبلی کا استعفے واپس لینا بڑے افسوس کا مقام ہے۔ ابھی ختم نبوت کا مسئلہ جوں کا توں ہے اور ختم نبوت کے لئے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرنے والے شہداء انصاف کے منتظر ہیں ۔کم عمر بچوں اوربچیوں کے ساتھ زیادتی کے واقعات جس کثرت سے ہو رہے ہیں اس سے پوری قوم شرمندہ ہے کہ یہ اسلامی اور انسانی معاشرہ ہے یا وحشی جانوروں کا جنگل ہے ،انسانی معاشرے کا وقار اور حسن اسلامی حدود ہی برقرار رکھ سکتی ہیں ۔ جیل بھرو تحریک کے چوتھے دن بھی 400عاشقان رسولﷺنے اپنے آپ کو قائد تحریک ڈاکٹر محمد اشرف آصف جلالی کی قیادت میں گرفتاریوں کے لئے پیش کیا ۔ایک بجے سے لے کر ساڑھے4بجے تک عاشقان رسول ﷺکی ایک بڑی تعداد پنجاب اسمبلی کے سامنے فیصل چوک میں موجود رہی ۔اس موقع پر مفتی محمد عابد جلالی ،مولانا محمد حنیف نظامی،مولانا محمد مرتضی علی ہاشمی، محمدجہانگیر بٹ ایڈوکیٹ نے بھی خطاب کیا جبکہ پیر سید عامر سلطان،علامہ ارشاد احمد جلالی،مفتی محمد طاہر نواز قادری،مفتی محمد عبد الکریم جلالی،مولانا محمد وقار جلالی،علامہ مظہر اقبال جلالی سمیت کثیر تعداد میں علماء نے شرکت کی۔

آصف جلالی

مزید : صفحہ آخر


loading...