نواز شریف مظلوم نہیں،گریٹر پنجاب کا خواب پورا نہیں ہو گا:سرائیکی صوبہ بنا کر رہیں گے :زرداری

نواز شریف مظلوم نہیں،گریٹر پنجاب کا خواب پورا نہیں ہو گا:سرائیکی صوبہ بنا کر ...

تونسہ شریف(تحصیل رپورٹر)سابق صدر اور پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئر پرسن آصف علی زرداری نے کہا ہے ہمیں سرائیکی صوبہ بنانے کی سزا دی گئی کیونکہ نواز شریف گریٹر پنجاب بنانا چاہتے تھے سرائیکی صوبہ بنانے میں اب بھی کوئی روکاوٹ نہیں جو کہ ہم بنا کر رہیں گے یہ بات انہوں نے سجادہ نشیں تونسہ شریف خواجہ عطاء اللہ خان اور ممبر پنجاب اسمبلی خواجہ محمد نظام المحمود کی رہائش گاہ پر پیپلز پارٹی کے کارکنوں ایک اجتماع اور میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے کہی انہوں نے کہا شیخ مجیب الرحمن طالبعلم راہنما تھے بعد میں سوشل ورکر بنے جبکہ نواز شریف ایک لوہار تھا اور اربوں ڈالر کی کرپشن کی یہ کیسے اپنے آپکو مجیب الرحمن کے ساتھ تشبیہ دیتا ہے انہوں نے کہا گریٹر پنجاب بننے کا خواب کبھی کسی صورت میں پورا نہیں ہوگا آئندہ ہم قومی الیکشن میں وفاق اور پنجاب فتح کریں گے اور انکو بھگائیں گے انہوں نے کہا امید ہے قومی الیکشن مقررہ وقت پر ہوں گے انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا موجودہ انڈیا نہرو اور گاندھی کا نہیں بلکہ مودی کا انڈیا ہے جو خود ساختہ سیکولر ہے انہوں نے کہا ہم نے اپنے دور میں چوہدری نثار سمیت تمام ن لیگی ارکان اسمبلی کو کوٹہ سے زیادہ فنڈز دیئے تھے لیکن ہمارے ارکان اسمبلی کو نظر انداز کر دیا گیا یہی سوچ ہماری اور نواز شریف کی ہے اور ہم نے ہمیشہ اپوزیشن کو ساتھ لے کر چلے آصف علی زرداری نے کہا سی پیک کی افادیت کو سمجھا نہیں گیا انہوں نے کہا نواز شریف کوئی مظلوم نہیں 6 گاڑیاں آگے اور 6 پیچھے ہوتی ہیں پھر بھی نواز شریف مظلوم ہے انکو پورا پروٹوکول دیا جارہا ہے اور ہمیں بکتر بند گاڑیوں میں لایا جاتا تھا انہوں نے کہا یوسف رضا گیلانی نے سرائیکی صوبہ کے قیام کے لیئے کافی محنت کی اور مجھے یہاں آکر محسوس ہوا ترقی صرف اپر پنجاب میں ہوئی ہے یہاں کی پسماندگی دیکھ کر افسوس ہوا انہوں نے کہا ہم نے پنجاب کو فوکس کیا ہوا ہے سرائیکی بلوچ سندھی پنجابی پٹھان محب وطن ہیں اور پاکستان کے لیئے ہر قسم کی قربانی دینے کے لیئے تیار ہیں انہوں نے ایس پی راو انور کے بارے میں ’’پاکستان‘‘ کے ایک سوال کے جواب میں کہا یہ میرے لیول کا نہیں میں سابق صدر پاکستان ہوں اور انہوں نے جواب دینے سے گریز کیا آصف علی زرداری نے کہا سردار ذوالفقار علی کھوسہ سے میری ملاقات ہوئی ہے اور ہمارے لیئے قابل احترام ہیں امید ہے وہ ہمارا ساتھ دیں گے آصف زرداری نے کہا پانامہ کا معاملہ ہم نے نہیں بین الاقوامی سطح پر اٹھایا گیا یہ کسی سیف الرحمن کا بنایا ہوا کیس نہیں تھا جس میں نواز شریف اور دیگر شامل ہوئے انہوں نے کہا جو لوگ عدلیہ کی نا انصافی کی بات کرتے ہیں وہ بتائیں جب شہباز شریف جج سے باتیں کرتے تھے پھر مجھے اس جج نے سزا بھی دی تھی لیکن پھر وہی سزا سپریم کورٹ نے ختم بھی کر دی اور ایک پورا سلسلہ جاری تھا انہوں نے کہا شہباز شریف ایک دن سیف الرحمن سے بات کرتے تھے دوسرے روز وہ کام ہوجاتا تھا یہ کیسے مظلوم ہیں جنکی اپنی حکومت ہے مظلوم تو ہم تھے جو مقدمات کا سامنا کرنے کے لیئے بکتر بند گاڑی میں لائے جاتے تھے انہوں نے کہا بھارتی وزیر اعظم نے سستی شہرت کے لیئے ہٹلر کی طرح نفرت کی سیاست کی انہوں نے کہا یہ منصوبہ کا افتتاح کرتے ہیں جنکی شروعات اور اختتام ہی نہیں ہوتا جبکہ انہوں نے سی پیک کو سمجھا ہی نہیں انکے اور منگولیا کے سی پیک کو دیکھ لیں انہوں نے کہا پیپلز پارٹی عوام کے حقوق کی جنگ لڑ رہی ہے اب بھی یہاں کے مکینوں کو حقوق دلا کر دم لیں گے انہوں نے کہا سرائیکی صوبہ کے عوامی مطالبے کو حکمرانوں کو ماننا پڑیگا اس سے قبل آصف علی زرداری بذریعہ ہیلی کاپٹر ملتان سے تونسہ آئے کالج گراونڈ میں انکا ہیلی پیڈ بنایا گیا تھا سجادہ نشیں تونسہ شریف خواجہ عطاء اللہ خان آر پی او ڈیرہ غازیخان ڈی پی او ڈیرہ غازیخان اور دیگر ڈویژنل و ضلعی حکام موقع پر موجود تھے پولیس رینجرز کی بھاری نفری تعینات تھی آصف علی زرداری کی حفاظت کے لیئے سندھ سے سپیشل سکواڈ منگوائی گئی سندھ پولیس کا دستہ بھی آیا ہوا تھا آصف علی زرداری نے دربار حضرت خواجہ شاہ سلیمان تونسویؒ دربار حضرت خواجہ نظام الدین تونسویؒ کے مزار مبارک پر حاضری دی پھولوں کی چادری چڑھائی آصف علی زرداری کے اعزاز میں خواجہ عطاء اللہ خان نے ایک ظہرانہ دیا بعد میں پیپلز پارٹی سے تعلق رکھنے والے ممبر پنجاب اسمبلی خواجہ محمد نظام المحمود کی رہائش گاہ پر گئے جہاں پیپلز پارٹی کے کارکنوں کے بہت بڑے اجتماع سے خطاب کیا آصف علی زرداری نے اپنا خطاب سرائیکی میں کیا اس موقع پر سابق وزیر اعظم سید یوسف رضا گیلانی ،پیپلز پارٹی جنوبی پنجاب کے صدر مخدوم احمد محمود،سابق وفاقی وزیر مخدوم فیصل صالح حیات ،شوکت بسرا،سابق سپیکر قومی اسمبلی فیصل کریم کنڈی،خواجہ محمد رضوان،مخدوم مصطفی ،مخدوم مرتضی،پیپلز پارٹی کے ڈویژنل صدر نوابزادہ افتخار احمد پیپلز پارٹی کے ضلعی صدر سردار عرفان اللہ خان کھوسہ ،سابق وفاقی وزیر سردار باز محمد خان کھتران،نتاشہ دولتانہ،سیف اللہ خان ڈھانڈلہ خلیل برمانی،شبلی شب خیز غوری،سردار علی مراد خان کھتران چیئرمین ضلع کونسل بارکھان سردار امیر محمد کھتران،پیپلز پارٹی کے ضلعی نائب صدر آصف بلوچ پیپلز پارٹی کے تحصیل صدر خواجہ عاقب حسین خواجہ شاہنواز خان اشرف خان طاہر بشیر نیاز بزدار و دیگر کارکن موجود تھے آصف علی ز؂رداری نے خواجہ عطاء اللہ خان رہائش گاہ پر پنجاب سندھ خیبرپختونخواہ آزاد کمشیر اور بلوچستان سے آئے ہوئے گدی نشین سے ملاقات کی اور ملکی سیاسی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا بعد میں آصف علی زرداری بذریعہ ہیلی کاپٹر ملتان روانہ ہوگئے۔

زرداری

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...