میپکو کے بنک اکاؤنٹس 6روز سے منجمد، فنانس ڈیپارٹمنٹ کو دھچکا

میپکو کے بنک اکاؤنٹس 6روز سے منجمد، فنانس ڈیپارٹمنٹ کو دھچکا

ملتان(نیوز رپورٹر) ریجنل ٹیکس آفس (آر ٹی او ) ان لینڈ ریونیو ملتان نے ٹیکس کی مد میں اربوں روپے کی وصولی کیلئے ملتان الیکٹرک پاور کمپنی میپکو کے بنک اکاؤنٹس کو پچھلے چھ روز سے منجمد رکھا ہوا ہے آر ٹی او ذرائع کے مطابق رجوانہ چیمبر کی معاونت سے میپکو کی جانب سے عدالتی احکامات آر ٹی او ملتان کی ٹیکس وصولی کیلئے کی گئی کارروائی پر اثر انداز نہیں ہوئے۔تاہم بنک اکاؤنٹس منجمد ہونے سے میپکو فنانس ڈیپارٹمنٹ کو دھچکا لگاہے اور ان کے مالی معاملات (بقیہ نمبر59صفحہ12پر )

بھی متاثر ہوئے ہیں جبکہ آر ٹی او حکام نے صارفین کی جانب سے میپکو کو سیلز ٹیکس کی مد میں اربوں روپے کی ادا شدہ خطیر رقم کی وصولی کے اقدامات کیخلاف کورٹ آرڈر پر ایف بی آر کے قانونی ماہرین سے مشاورت شروع کردی ہے باوثوق ذرائع کے مطابق سیلز ٹیکس کی مد میں میپکو ادارے پر 2012ء 2014ء 2015اور 2017کے اربوں روپے کے ٹیکسز واجب الادا ہیں جو میپکو صارفین سے وصول کرچکی ہے سیلز ٹیکس کی مد میں اب بھی 11ارب روپے اور ودہولڈنگ ٹیکس کی مد میں 35کروڑ روپے واجب الادا ہیں مذکورہ رقم پچھلے نو سال سے بقایاجات میں شامل ہے آر ٹی او حکام نے تین بنک منجمد کو اکاؤنٹس منجمند کرنے اور ٹیکس کی رقم وصول کرنے کے دوران بیت و لعل اور مزاحمت کرنے پر شوکاز نوٹس بھی جاری کردیا ہے ٹیکس بار کے ایک سینئر ممبر کے مطابق میپکو نے کورٹ آردر میں یہ موقف اپنایا ہے کہ آر ٹی او حکام نے اکاؤنٹس منجمند کرکے جو رقم میپکو اکاؤنٹس سے نکلوائی ہے وہ ملازمین کی تنخواہوں ، پنشنز اور ویلفیئر کیلئے مختص تھی جو اربوں روپے صارفین سے ٹیکس کی مد میں وصول کیے گئے ہیں وہ کہاں گئے یہ ایک بہت بڑا سوالیہ نشان ہے جس کا جواب میپکو حکام دینا چاہیئے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...