عصر حاضر میں انفارمیشن ٹیکنالوجی اور تعلیم لازم و ملزوم ہیں:ضیاء بنگش

عصر حاضر میں انفارمیشن ٹیکنالوجی اور تعلیم لازم و ملزوم ہیں:ضیاء بنگش

پشاور( سٹاف رپورٹر)چیئرمین سٹینڈنگ کمیٹی برائے اطلاعات و تعلقات عامہ ضیاء اللہ بنگش ایم پی اے نے کہا ہے کہ عصر حاضر میں انفارمیشن ٹیکنالوجی اور تعلیم لازم و ملزوم ہیں اور اس کے بغیر ترقی و خوشحالی کا تصور بھی نہیں کیا جاسکتالہذا انفارمیشن ٹیکنالوجی کی اہمیت کے پیش نظر پی ٹی آئی کی حکومت صوبے کے تمام سرکاری سکولوں میں جدید ترین آٹی لیب قائم کر رہی ہے اور گزشتہ ساڑھے 4سال کے دوران آٹی لیب کی تعداد 179سے سے بڑھا کر 1340کر دی گئی ہے اور کوشش ہے کہ اپنے دور اقتدار میں تمام ہائی و ہائر سیکنڈری سکولوں میںآئی ٹی لیب قائم کئے جائیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گورنمنٹ گرلز ہائی سکول تپی کوہاٹ میں آئی ٹی لیب کا افتتاح کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر دوسروں کے علاوہ رکن صوبائی اسمبلی زرین ضیاء،ڈی ای او فی میل زیب النساء ،سکول کی پرنسپل گل شاہین ،محکمہ تعلیم کے متعلقہ حکام اورمقامی منتخب نمائندے بھی موجود تھے۔چیئرمین سٹینڈنگ کمیٹی نے کہا کہ حکومت خیبر پختونخوا شعبہ تعلیم میں انفارمیشن ٹیکنالوجی متعارف کرانے کیلئے کوشاں ہے اور ڈیجیٹل لیٹریسی عام کرنے کیلئے عملی اقدامات اٹھارہی ہے ۔اسی طرح سرکاری سکولوں میں قائم کئے گئے آئی لیب کو سیکنڈ شفٹ میں کمیونٹی کے لئے کھولنے کا فیصلہ کیاگیاہے تاکہ طلبہ کے ساتھ ساتھ عام لوگ بھی ان سے مستفید ہو سکیں ۔ضیاء بنگش نے کہا کہ ڈیجیٹل لیٹریسی کو عام کرنے کے لئے پہلے مرحلے میں ہائیر سیکنڈری سکولوں میں انٹرایکٹیو وائٹ بورڈ لگائے جارہے ہیں اور اب تک 500سکولوں میں یہ لگائے جاچکے ہیں اور یہ تعداد 11سو تک بڑھا نے کا ہدف ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ حکومت کی جانب سے فراہم کردہ آئی ٹی سہولیات سے طلبہ کے ساتھ ساتھ کمیونٹی بھی برابر مستفیدہوں اور فارغ وقت میں یہ عوام کے کام آئے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...