آزادکشمیر کے سیاسی فیصلے آزادکشمیر میں ہونے چاہئیں،سردار خالد ابراہیم

آزادکشمیر کے سیاسی فیصلے آزادکشمیر میں ہونے چاہئیں،سردار خالد ابراہیم

مظفرآباد (بیورورپورٹ)جموں وکشمیر پیپلز پارٹی کے سربراہ ممبر قانون ساز اسمبلی سردار خالد ابراہیم نے کہا ہے کہ آزادکشمیر کے سیاسی فیصلے آزادکشمیر میں ہونے چاہئیے ۔پاکستان کے سیاستدان آزادکشمیر کے فیصلے کرنے کے مجاز نہیں ۔جموں وکشمیر پیپلز پارٹی آزادکشمیر میں سنجیدہ سیاست کو فروغ دے رہی ہے ۔نواز شریف آزادکشمیر کے لوگوں کے فیصلے نہ کریں ۔مظفرآباد اور میرپور میں بیٹھ کر آزادکشمیر کے فیصلے کرینگے ۔لوگ ووٹ امیدوار کو دیتے ہیں تو وہ اسمبلی میں پہنچ جاتا ہے ۔لوگوں کے ووٹ کا احترام کرنا چاہئیے ۔جماعتی کارکن کو اس کے ووٹ کا حق دیا جائے ۔آئندہ الیکشن تنہا لڑیں گے ۔کسی سے اتحاد نہیں ہوگا۔جماعت کی صدارت سے علیحدہ رہ کر جماعت کیلئے زیادہ کام کیا ۔کارکن اور عہدیدار میں فرق ہے ۔جے کے پی پی جماعت کا مشن لے کر چل رہی ہے ۔ن لیگ کے اتحادی تھے اگر اتحاد برقرار رہتا تو آج جو حصہ داریان ہو رہی ہیں اس میں ہمیں بھی کچھ نہ کچھ حصہ مل جاتا ۔ہمیشہ جمہوریت کی بات کی ۔آئین قانون کی بالادستی کی بات کی ۔غازی ملت سردار محمد ابراہیم خان کا شمار آزادکشمیر کے صف اول کے لیڈر میں ہوتا ہے ۔تحریک آزادی کا حصہ ہیں ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے یہاں مقامی ہوٹل میں جے کے پی پی ضلع مظفرآباد کے ورکر کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔تقریب سے فریدون اعوان ،سردار تسلیم ،خواجہ سجاد ایڈووکیٹ،نعیم قریشی ،ثاقب شیخ ایڈووکیٹ ،راجہ منیر یونس ،اجمل جلیل مغل ،آصف گیلانی ،عدنان ریاض ،سردار نسیم ،سردار قدیر ،امبر شہزادی ،شعیب علی بخاری ،قیصر قریشی ،شاہد گیلانی ،بلال شکیل ،ٹھیکیدار سعید ،رانا کاشف،فرید اعوان ،زاہد گیلانی اور دیگر نے بھی خطاب کیا ۔سردار خالد ابراہیم خان نے کہا کہ عام انتخابات میں مجھے زیادہ ووٹ پونچھ سے آتا ہے ۔20سال پیپلز پارٹی کا حصہ رہے ۔1967 ؁ء سے پیپلز پارٹی کے ساتھ منسلک ہوئے ۔انہوں نے کہا کہ کشمیر پر بین الاقوامی 10کانفرنس ہوئیں ۔ان میں کشمیریوں کو نمائندگی مسلم کانفرنس یا جموں وکشمیر پیپلز پارٹی نے کی ۔سردار عبدالقیوم اس وقت حکومت میں تھے وہ الگ بات ہے کہ اس کا اثر بعد میں کیا ہوا۔جے کے پی پی کے کام اور مقصد کو سمجھنے کی ضرورت ہے ۔کارکن اور عہدیدار میں فرق ہے کیونکہ عہدیدار کی ذمہ داریاں بڑھ جاتی ہیں ۔جے کے پی پی اصولوں پر سیاست کر رہی ہے ۔تعداد بے شک تھوڑی ہو مگر اصول اور مشن میں کسی سے کم نہیں ہم کوئی دعویٰ نہیں کرتے مگر سنجیدہ سیاست پر یقین رکھتے ہیں ۔جن حالات میں ہم کام کر رہے ہیں ویسے بھی حکومت ہمارے مخالف ہے ۔سردار خالد ابراہیم نے کہا کہ کارکنان جماعت کو فعال اور مضبوط بنانے کیلئے بھرپور محنت کریں ۔جے کے پی پی کے ضلعی کنونشن کے علاوہ ڈویژن کی سطح پر تنظیم سازی کریں گے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...