کراچی ،ایس بی ٹی ای کے وفد کا کے الیکٹرک کے دفتر کا دورہ

کراچی ،ایس بی ٹی ای کے وفد کا کے الیکٹرک کے دفتر کا دورہ

کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ بورڈ آف ٹیکنیکل ایجوکیشن (SBTE)کے ایک وفد نے کے الیکٹرک کے دفتر کادورہ کیا اور یوٹیلیٹی کمپنی کی ٹریننگ اکیڈمی میں جاری تربیتی سرگرمیوں کا جائزہ لیا ۔کے الیکٹرک نے ا پنی فیلڈ ٹیموں کی مسلسل تربیت اور بہتری کے لیے جدید ترین تربیتی سہولتوں سے آراستہ ڈسٹری بیوشن نیٹ ورک اکیڈمی (DNA) قائم کی ہے جہاں باضابطہ طور پر سرٹیفائیڈ اپرنٹس شپ پروگرام بھی جاری ہے ۔سندھ بورڈ آف ٹیکنیکل ایجوکیشن کے وفد نے کے الیکٹرک کی اکیڈمی میں قائم مختلف لیبارٹر یوں کا دورہ کیا اور افرادی قوت کی صلاحیتوں کو مزیدبہتربنانے کے لیے کی جانے والی کوششوں کو سراہا۔اس موقع پر سندھ بورڈ آف ٹیکنیکل ایجوکیشن کے چیئرمین، ڈاکٹر مسرور احمد شیخ نے کہا،’’مقامی پاور سیکٹر تبدیلی کے مراحل سے گزر رہا ہے جس میں بہت زیادہ سرمایہ کاری بھی کی جا رہی ہے۔چنانچہ اس موقع سے بھرپور فائدہ اٹھانے کے لیے ہمیں اپنی افرادی قوت کوبھی ان کے متعلقہ شعبوں میں پوری طرح ماہر بنانے کی ضرورت ہے۔ کے الیکٹرک کی ڈسٹری بیوشن نیٹ ورک اکیڈمی(DNA)ایک مثالی تربیت گاہ ہے جہاں انتہائی کارآمد تربیتی اور ترقیاتی ماڈل موجود ہے جسے دیگر اداروں ، اور بالخصوص پاور سیکٹر سے تعلق رکھنے والے اداروں کو بھی اختیار کرنا چاہیے۔‘‘کے الیکٹرک کے ترجمان کے مطابق، ’’ہم اس بات کو یقینی بناتے ہیں کہ ہماری ٹیموں کے لیے تربیت کے ہر ممکن مواقع میسردستیاب ہوں اور ٹیلنٹ کی مسلسل ترقی کے بارے میں ہمارا انداز فکرلیڈرشپ کے تصور پر مبنی ہے۔ ہم اس دورہ کے لیے سندھ بورڈ آف ٹیکنیکل ایجوکیشن کے شکر گزار ہیں اور امید کرتے ہیں کہ وہ ہمارے تربیتی پروگراموں کو مزید بہتر بنانے میں ہماری مدد کریں گے۔‘‘کے الیکٹرک کی ڈسٹری بیوشن نیٹ ورک اکیڈمی نے گزشتہ برس اندرونی اور بیرونی تربیتی سیشنوں کے ذریعے ٹریننگ اور ڈیویلپمنٹ میں 80,000سے زائدگھنٹوں کی تربیت فراہم کی ہے۔ووکیشنل ٹریننگ کے بارے میں کے الیکٹرک کے اقدامات، بہترین پیپل مینجمنٹ کے طریقوں، صحت ، تحفظ اور ماحولیاتی معیارات کا مختلف پلیٹ فارمز پر اعتراف کیا گیا ہے۔ گزشتہ برس، پاور یوٹیلٹی کمپنی نے ایمپلائرز فیڈریشن آف پاکستان (EFP)کی جانب سے ’لارج نیشنل کمپنیز‘ کے شعبہ میں پانچواں ایمپلائر آف دی ایئر ایوارڈ 2016 جیتا تھا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...