رسول کریم ﷺ کے وہ انتہائی مقرب صحابی جو اپنے بالوں کی دو چوٹیاں بنایا کرتے تھے

رسول کریم ﷺ کے وہ انتہائی مقرب صحابی جو اپنے بالوں کی دو چوٹیاں بنایا کرتے ...
رسول کریم ﷺ کے وہ انتہائی مقرب صحابی جو اپنے بالوں کی دو چوٹیاں بنایا کرتے تھے

  


حضرت ابو عبیدہ بن جراحؓ بڑے دلیر اور قوی تھے۔ تمام غزوات میں وہ آنحضور صلی اللہ علیہ وسلم کے ساتھ ساتھ رہے۔ جنگ بدر میں انھوں نے بڑی جواں مردی دکھائی،تب ان کی عمر اکیالیس برس تھی۔کفار قریش ان سے خوف زدہ تھے اور جنگ میں ان سے بچنے کی کوشش کرتے رہے۔ حضرت ابوعبیدہ بھی ایک شخص پر وار کرنے سے پرہیز کرتے رہے لیکن وہ بار بار ان کے سامنے آجاتا۔یہ ان کا باپ عبداللہ بن جراح تھا۔جب اس نے جنگ میں ابوعبیدہ کی راہ روکیتوانھوں نے تلوار چلا کر اس کاسر قلم کر دیا۔

سیرہ و تواریخ اسلامی کی مستند کتابوں میں لکھا ہے کہ حضرت ابوعبیدہ لمبے ،دبلے ، چھریرے اور روشن رو تھے۔ان کی ڈاڑھی لمبی اور ہلکی تھی،کندھے کچھ جھکے ہوئے تھے۔سر اور ڈاڑھی کے بالوں پر مہندی یا وسمہ لگاتے۔بالوں کی دو گتیں (چوٹیاں ) بنا کر رکھتے تھے ۔ عام زندگی میں نرم خو ،منکسر المزاج اور شرمیلے تھے لیکن جب کوئی اہم معاملہ درپیش ہوتاتو گرجتے ہوئے شیر بن جاتے۔

مزید : روشن کرنیں


loading...