کپڑوں کے معروف برانڈ نے دھوتی متعارف کروادی، لیکن وہ بھی ایسی کہ دنیا بھر کے پنجابیوں کو غصہ چڑھ گیا، احتجاج کرنے لگے کیونکہ ۔۔۔

کپڑوں کے معروف برانڈ نے دھوتی متعارف کروادی، لیکن وہ بھی ایسی کہ دنیا بھر کے ...
کپڑوں کے معروف برانڈ نے دھوتی متعارف کروادی، لیکن وہ بھی ایسی کہ دنیا بھر کے پنجابیوں کو غصہ چڑھ گیا، احتجاج کرنے لگے کیونکہ ۔۔۔

  


لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن) جنوبی ایشیا اور بالخصوص پنجاب میں پہنی جانے والی دھوتی 70 ڈالر میں فروخت کرنے والے کپڑوں کے معروف سپینش برانڈ ’ زارا‘ کو دنیا بھر میں شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

ڈیلی پاکستان گلوبل کے مطابق کپڑوں کے برانڈ زارا کی طرف سے خواتین کیلئے دھوتی کو ’ چیک منی سکرٹ‘ کا خوبصورت نام دے کر متعارف کرایا گیا ہے جس کی قیمت 7 ہزار روپے سے زائد رکھی گئی ہے، حالانکہ بازار میں ایک دھوتی زیادہ سے زیادہ تین سو روپے میں مل جاتی ہے۔کپڑوں کے انٹرنیشنل برانڈ کی اس چالاکی پر دنیا بھر کے سوشل میڈیا صارفین سخت برہمی کا اظہار کر رہے ہیں۔

اریجیت پالادھی نے کہا کہ یہ سکرٹ نہیں لنگی ہے اور اس میں ایسی کیا الگ بات ہے؟ میرے داد ا کو اگر یہ بات پتہ چل جائے کہ زارا والے ایک دھوتی کی قیمت 5 کورس کھانے کے برابر وصول کر رہے ہیں تو وہ ان کی دکان ہی جلادیتے جبکہ کھانا کھانے کے بعد انہوں نے کھانے کے اتنے زیادہ پیسے لینے پر ریسٹورنٹ بھی جلا دینا تھا۔

پھولن دیوی نے لکھا کہ ان کے والد کی لنگی کی قیمت 3 پاﺅنڈ سے بھی کم ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /لائف سٹائل


loading...