اہلخانہ نے نابالغ لڑکی کی شادی کردی، معاملہ عدالت پہنچا تو دولہے کو ساتھیوں سمیت جیل بھیج بھجوا دیا گیا کیونکہ ۔ ۔۔

اہلخانہ نے نابالغ لڑکی کی شادی کردی، معاملہ عدالت پہنچا تو دولہے کو ساتھیوں ...
اہلخانہ نے نابالغ لڑکی کی شادی کردی، معاملہ عدالت پہنچا تو دولہے کو ساتھیوں سمیت جیل بھیج بھجوا دیا گیا کیونکہ ۔ ۔۔

  


عمرکوٹ (ریحان ہاشمی ) سول جج عمرکوٹ نے کم عمر نابالغ لڑکی سے شادی کا الزام ثابت ہونے پر دولہا، نکاح خواں اور نابالغ لڑکی دلہن کے والد سمیت سات افراد کو چائلڈ میرج ایکٹ کے تحت دو سال قید اور دس دس ہزار روپے جرمانے کی سزا سنادی، ملزمان ضمانت پر رہا تھے، سزا کا فیصلہ آنے کے بعد پولیس نے ملزمان کو گرفتار کر کے سب جیل عمرکوٹ منتقل کر دیا۔

سزا پانے والے ملزمان میں احمد خان آریسر نکاح خواں قربان ھالیپوٹہ لڑکی کا والد قادربخش سولنگی اورگواہان باراتی شامل ہیں. واضح رہے کہ چھ ماہ قبل سٹی تھانہ پولیس عمرکوٹ نے شہر کے نواحی علاقے بختاور کالونی میں خفیہ اطلاع پر بارات پر چھاپہ مار کر ملزمان کو گرفتار کر کے سرکاری مدعیت میں مقدمہ درج کرلیا تھا اور کافی وقت سے یہ مقدمہ سول جج عمرکوٹ کی عدالت میں زیر سماعت تھا۔ آج اس اہم مقدمہ سول جج عامر راجپوت کی عدالت نے فیصلہ دیا ۔

اس فیصلے میں سزا پانے والوں میں کم عمر دلہن کے والد ،دولہا اور نکاح خواں اور شادی کے گواہان اور باراتی شامل ہے دوسری طرف کم عمر دلہن کے والد کا میڈیا سے بات چیت کرنے میں کہنا تھا کہ ھم غریب لوگ ہے ھمیں قانون کا پتہ نہیں تھا ۔

مزید : جرم و انصاف /علاقائی /سندھ /عمرکوٹ


loading...