برطانیہ میں 14 سال کی بچی کے ساتھ زیادتی کرنے والے شخص کے ساتھ مشتعل ہجوم نے کیا کیا؟ جان کر آپ کہیں گے کہ یہ صرف پاکستان میں ہی نہیں ہوتا، کیا انجام ہوا؟ جانئے

برطانیہ میں 14 سال کی بچی کے ساتھ زیادتی کرنے والے شخص کے ساتھ مشتعل ہجوم نے ...
برطانیہ میں 14 سال کی بچی کے ساتھ زیادتی کرنے والے شخص کے ساتھ مشتعل ہجوم نے کیا کیا؟ جان کر آپ کہیں گے کہ یہ صرف پاکستان میں ہی نہیں ہوتا، کیا انجام ہوا؟ جانئے

  


لندن(نیوز ڈیسک)بچوں کو ہوس کا نشانہ بنانے والے جنسی درندے ہر جگہ پائے جاتے ہیں۔ اکثر یہ اپنے بھیانک جرائم کے بعد بچ نکلنے میں بھی کامیاب ہو جاتے ہیں لیکن اگر کبھی پکڑے جائیں تو لوگ ان کے ساتھ ایسا سلوک کرتے ہیں کہ واقعی انہیں عبرت کا نشان بنا دیتے ہیں۔ ایک ایسا ہی واقعہ برطانیہ میں اس وقت پیش آ گیا جب پولیس ایک جنسی درندے کو اس کے گھر سے گرفتار کرنے پہنچی۔

سوشل میڈیا پر اس واقعے کی ویڈیو سامنے آئی ہے جس میں غضبناک ہجوم کو جنسی مجرم کے گھر کے سامنے دیکھا جاسکتا ہے۔ اس شخص پر الزام تھا کہ اس نے ایک 14 سالہ لڑکی کو اپنی ہوس کا نشانہ بنانے کی کوشش کی تھی۔ یہ بدقماش اپنے والدین کے ساتھ رہائش پذیر تھا لیکن پھر بھی شیطانی کام کرتے ہوئے اسے شرم نا آئی۔ پولیس جب اسے اس کے گھر سے نکال کر لیجارہی تھی تو لوگوں نے اس کا گھیراﺅ کرلیا۔ سارے علاقے میں خبر پھیل چکی تھی کہ اس نے سوشل میڈیا پر ایک نوعمر لڑکی سے رابطہ کیا اور اسے اپنی جنسی ہوس کا نشانہ بنانے کی کوشش کررہا تھا۔ جب پولیس اسے اپنی گاڑی میں بٹھارہی تھی تو لوگوں نے اس پر پتھر برسانے شروع کردئیے اور اسے بدترین گالیاں دیتے رہے۔

اس ملزم کا سراغ لگانے میں ’ہلز چائلڈ پروٹیکٹرز‘ نامی فلاحی گروپ نے بنیادی کردار اد اکیا جنہوں نے سوشل میڈیا پر اس کی سرگرمیوں پر نظر رکھی ہوئی تھی۔ پولیس اس شخص کو حراست میں لینے کے لئے شام 7بجے کے قریب پہنچی لیکن لوگوں کا ایک بڑا ہجوم پہلے ہی وہاں جمع ہوچکا تھا۔ غصے سے بپھرے ہوئے لوگوں نے ناصرف پولیس کی گاڑی پر پتھراﺅ کرکے اسے نقصان پہنچایا بلکہ مبینہ جنسی مجرم کے گھر پر بھی حملہ کیا اور کھڑکیوں کے شیشے اور دروازے توڑ ڈالے۔

غصے سے بھرے لوگوں نے پولیس اہلکاروں پر بھی اپنی برہمی کا اظہار کیا اور انہیں کہتے رہے کہ وہ ایک جنسی مجرم کو بچانے آئے ہیں۔ مزید ہنگاموں کے خطرے کے پیش نظر علاقے میں پولیس کی بھاری نفری تعینات کردی گئی جبکہ مقامی حکام کی جانب سے عوام سے پرسکون رہنے کی اپیل بھی جاری کی گئی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /برطانیہ


loading...