’سمعیہ شاہد‘وہ پاکستانی لڑکی جس کے اپنے ہی باپ نے اس کے ساتھ زیادتی کرنے میں مدد کی اور بعد میں موت کے گھاٹ اتاردیا، اب اس کے باپ کے ساتھ کیا انجام ہوا؟ جانئے

’سمعیہ شاہد‘وہ پاکستانی لڑکی جس کے اپنے ہی باپ نے اس کے ساتھ زیادتی کرنے میں ...
’سمعیہ شاہد‘وہ پاکستانی لڑکی جس کے اپنے ہی باپ نے اس کے ساتھ زیادتی کرنے میں مدد کی اور بعد میں موت کے گھاٹ اتاردیا، اب اس کے باپ کے ساتھ کیا انجام ہوا؟ جانئے

  


جہلم(مانیٹرنگ ڈیسک) ڈیڑھ سال قبل پاکستانی نژاد برطانوی خاتون سمعیہ شاہد کے المناک قتل کا واقعہ پیش آیا تو نا صرف مقامی بلکہ بین اقوامی میڈیا میں بھی اس خبر نے ہنگامہ برپا کر دیا۔ اس واقعے کا سب سے دردناک پہلو یہ تھا کہ مقتولہ کے والد محمد شاہد کو ہی اس کے ساتھ زیادتی اور قتل کا سہولت کار قرار دیا گیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق سمعیہ کو پاکستان میں اس کے اہلخانہ نے اس کے والد کی بیماری کا بہانہ بنا کر بلایا اور پھر ان کے سابق شوہر نے انہیں زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کر ڈالا۔ اپنی ہی بیٹی پر لرزہ خیز ظلم کروانے کا ملزم قرارپانے والے محمد شاہد کے بارے میں اب یہ خبر سامنے آئی ہے کہ ایک طویل صعوبت کے بعد دل کا دورہ پڑنے سے اس کی موت ہو گئی ہے۔

میل آن لائن کے مطابق محمد شاہد کی طبیعت اس کی بیٹی کے قتل کے واقعے کے کچھ عرصے بعد ہی بگڑ گئی تھی اور پھر کبھی سنبھل نہیں پائی۔ برطانوی نشریاتی ادارے نے سمعیہ شاہد کیس پر تفصیلی تحقیقات کے بعد ایک ڈاکومنٹری بھی بنائی ہے جو محض دو دن بعد ہی ٹی وی پر نشر ہونے والی ہے۔

محمد شاہد کے قریبی عزیزوں کا کہنا ہے کہ بیٹی کی موت، پولیس کی تحقیقات اور خاندانی مسائل نے اس کی ذہنی و جسمانی صحت پر انتہائی منفی اثرات مرتب کئے جن کے زیر اثر بالآخر وہ دنیا سے رخصت ہوگیا۔ پولیس نے اسے بیٹی کے قتل میں سہولت کاری کے الزام میں گرفتار بھی کیا تھا لیکن بعدازاں اسے رہا کردیا گیا۔ رہائی کے بعد سے اب تک وہ پاکستان میں ہی مقیم تھا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /برطانیہ


loading...