بنو ں ، ضلعی انتظامیہ نے شہر میں خواجہ سراﺅں کو داڑھی رکھنے کا حکم جاری کردیا ، پولیس کی تردید

بنو ں ، ضلعی انتظامیہ نے شہر میں خواجہ سراﺅں کو داڑھی رکھنے کا حکم جاری کردیا ...
بنو ں ، ضلعی انتظامیہ نے شہر میں خواجہ سراﺅں کو داڑھی رکھنے کا حکم جاری کردیا ، پولیس کی تردید

  


بنوں (ڈیلی پاکستان آن لائن) خیبرپختونخوا کے ضلع بنوں کی خواجہ سرا کمیونٹی نے الزام عائد کیا ہے کہ ضلعی انتطامیہ انہیں داڑھی رکھنے پر مجبور کررہی ہے اورڈاڑھی نہ رکھنے پر علاقہ چھوڑنے کو کہا جارہا ہے جبکہ پولیس نے کمیونٹی کے ان الزامات کی سختی سے تردید کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق بنوں کے دو خواجہ سراﺅں کی جانب سے ایک ویڈیو جاری کی ہے جس میں ان کا کہنا تھا کہ بنوں پولیس انہیں داڑھی رکھنے کا کہہ رہی ہے، پولیس کہتی ہے کہ داڑھی رکھو، نماز پڑھو، روزے رکھو اور ناچ گانا نہ کرو۔اگر تم ایسا نہیں کرتے تو تم شہر سے نکل جاﺅ۔ خواجہ سرا کا کہنا تھا کہ ہم مسلمان ہیں ، ہم نماز بھی پڑھتے ہیں اور روضے بھی رکھتے ہیں۔ ہمیں نکل جانے کا کہا جا رہا ہے ، ہم آخر کریں تو کیا کریں ، نہ تو ہمیں بازار میں رہنے دیا جار ہا ہے اور نہ ہی ہمارے گھروالے ہمیں قبول کرنے کو تیار ہیں۔ ہم بنوں کے رہائشی ہیں اور ہم یہاں پر ہی رہیں گے۔ انہوں نے حکام بالا سے انصاف دلانے کا مطالبہ کیا ہے۔

دوسری جانب بنوں پولیس کا کہنا تھا کہ انہوں نے ایسا کوئی حکم جاری نہیں کیا ہے اور ان کے خلاف جھوٹا بیان جاری کیا گیا ہے۔ پولیس نے خواجہ سراﺅں کو ناچ گانے سے روکا ہے کیوں کہ ان کے ناچ گانے کی وجہ سے علاقے میں فحاشی اور عریانی پھیلتی ہے۔

مزید : علاقائی /خیبرپختون خواہ /بنوں


loading...