جماعت اسلامی مسئلہ کشمیر پر سود ے بازی قبول نہیں کریگی،ذکر اللہ مجاہد

جماعت اسلامی مسئلہ کشمیر پر سود ے بازی قبول نہیں کریگی،ذکر اللہ مجاہد

  



لاہور(پ ر)امیر جماعت اسلامی لاہور ڈاکٹر ذکراللہ مجاہد نے کہا ہے کہ جماعت اسلامی مسئلہ کشمیر پر کسی قسم کی سودے بازی قبول نہیں کرے گی۔ مقبوضہ جموں و کشمیر میں مظلوم کشمیری مسلمان 179 دنوں سے بھارتی ظلم و بربریت کی چکی میں پس رہے ہیں۔ جماعت اسلامی لاہو ر کے زیر اہتمام 31 جنوری شہر بھر میں جمعتہ المبارک کے ن مساجد کے باہر تقسیم ہینڈ بل اور ڈسپلے پروگرامات منعقد کیے جائیں گے۔ 2 فروری کو جماعت اسلامی لاہور آل پارٹیز کانفرنس کا انعقاد کرے گی اور3فروری کوشہر بھر کے بڑے چوکوں میں یکجہتی کشمیر مارچ کیمپوں کا انعقاد ہوگا۔ جماعت اسلامی لاہور کے زیر اہتمام 5 فروری کو کشمیری مسلمان بھائیوں سے اظہار یکجہتی کیلئے مال روڈ پر عظیم الشان کشمیر مارچ ہو گا۔ مار چ کی قیادت امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق، امیر جماعت اسلامی لاہور ڈاکٹر ذکر اللہ مجاہد سمیت مرکزی، صوبائی اور ضلعی قائدین کریں گے۔

مارچ میں وکلاء، اساتذہ، تاجر، طلبہ، مزدورں سمیت مردوں و خواتین اور بچوں کی بڑی تعداد شرکت کرے گی۔ ان خیالات کا اظہا رانہوں نے پریس کلب لاہور میں کمر توڑ مہنگائی، حکمرانوں کی نا اہلی کے خلاف اور 5 فروری یوم یکجہتی کشمیر مارچ کی تیاریوں کے حوالے سے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر ان کے ہمراہ سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی لاہور انجینئر اخلاق احمد، نائب امراء جماعت اسلامی لاہور ملک شاہد اسلم، ضیاء الدین انصاری، اظہر بلال، افتخار احمد چوہدری، ڈپٹی سیکرٹریز جماعت اسلامی لاہور چوہدری محمود الاحد، عبدالعزیز عابد، صدر جے آئی یوتھ لاہور صہیب شریف، سیکرٹری اطلاعات جماعت اسلامی لاہور اے ڈی کاشف و دیگر قائدین موجود تھے۔ ڈاکٹر ذکر اللہ مجاہد نے مزید کہا کہ بھارت کی بربریت کی وجہ سے جنوری1989سے دسمبر 2019کے درمیان95475کشمیری شہید5054937زخمی10ہزارسے زائد افرادلاپتہ7136حراستی قتل40000 نفوس ہجرت پرمجبور 11175خواتین کی اجتماعی بے حرمتی کے واقعات158399گرفتار شدگان22911 بیوگان 107784بچے یتیم اور 109451مکانات تباہ کر دئیے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 179 دن پہلے بھارتی جنتا پارٹی کی فاشٹ حکومت نے بھارتی آئین کی دفعہ 370 اے اور35 اے کو منسوخ کر کے مقبوضہ کشمیر کو ہڑپ کر لیا ہے جس کو کشمیریوں سمیت پاکستانی عوام اور پوری امت مسلمہ قبول نہیں کرتی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1