پاکستان کینیاکے احساسات، امنگیں اوردکھ درد کی کہانیاں ایک جیسی،شاہ محمود

  پاکستان کینیاکے احساسات، امنگیں اوردکھ درد کی کہانیاں ایک جیسی،شاہ محمود

  



نیروبی(این این آئی) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاہے پاکستان میں کینیا چائے اور کینیا میں پاکستان کے چاول کے صارفین کی قابل لحاظ تعداد اور شائق موجود ہیں،ہمارے احساسات، خواب، امنگیں، خواہشات اور تخلیقات، ہمارے دکھ درد کی کہانیاں ایک جیسی ہیں، 2018ء میں دنیا کی دس تیزی سے ترقی کرتی ہوئی معیشتوں میں سے چھ افریقی ہیں،2019ء کی ورلڈ بنک کی کاروبار میں آسانیوں کی د رجہ بندی میں، 10بہترمعیشتوں میں سے5 افریقہ سے ہیں،پختہ عزم کیساتھ ہم نے دہشت گردی کی لہر کا منہ موڑ دیا ہے،پاکستان میں 2.25ارب ڈالر کی ریکارڈ غیرملکی سرمایہ کاری ہوئی ہے جو 200فیصد اضافہ دکھارہی ہے،ہمیں مستقبل کی شراکت داری کیلئے مضبوط بنیاد رکھنے کی ضرورت ہے۔ گزشتہ روز پاکستان اور افریقہ میں تجارت کے فروغ کی کانفرنس کی افتتاحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر خا ر جہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہاآپ سب کا خیرمقدم کرتا ہوں۔ صدر کنیاتا کا شکریہ ادا کرتا ہوں کہ وہ یہاں ہم میں موجود ہیں اور انہوں نے تقریب کو رونق بخشی۔ افریقہ میں تجارتی سرگرمیوں کے فروغ کے سلسلے میں اس آغاز کیلئے نیروبی کا انتخاب دانستہ کیاگیا۔ پاکستان اور کینیاء میں دوستی اور قریبی تعاون کی مضبوط اور فعال تاریخ ہے۔ کینیا، افریقہ میں پاکستان کا سب سے بڑا تجارتی شراکت دار ہے، گذشتہ برس ہماری دوطرفہ باہمی تجارت تقریباً ایک ارب ڈالر کی حد کو چھو چکی ہے۔ افریقہ مستقبل کا دروازہ ہے۔ باالفاظ دیگر ”کینیا مستقبل ہے“کینیا افریقہ کی سب سے اینٹر پرائزنگ قوم ہے۔ افریقہ تیزی سے ترقی کرتی معیشت کیساتھ ساتھ ’سلیکون سوانا‘ اور متنوع وسائل کی بنیا د ہے۔ صدر کنیاتا ’بِگ 4 ایجنڈا‘ کے تحت تبدیلی لارہے ہیں تاکہ مینوفیکچرنگ، فوڈ سکیورٹی، صحت عامہ میں اضافہ ہو اور عوام کو مناسب رہائشی سہولیات میسرآسکیں۔ یہ اقدامات ترقی وخوشحالی کی طرف کینیا کی ترقی کی راہ ہموار کررہے ہیں،یہ بہت حد تک پاکستان میں ترقی کے خاکے کی عکاسی ہے۔کینیا بڑے خواب دیکھنے اور کامیابیاں حاصل کرنے والوں کی جگہ ہے جو تعلیم اور صحت میں سرمایہ کاری کا مرہون منت ہے۔ ہمارے درمیان استوار تاریخی روابط کو ایک مرتبہ پھر دوہرانے کا موقع میسر آیا ہے،اس کے نتیجے میں ہمیں ترقی اور خوشحالی کے یکساں فوائد سے ہمکنار ہونے کا موقع ملا ہے۔ پاکستان نے افریقی ریاستوں کی آزادی کی تحریک کی سیاسی، سفارتی، اخلاقی اور مادی مدد کی ہے۔ ہم نے رنگ ونسل کے امتیاز اور بیرونی جارحیت کے خلاف ہمیشہ کردار ادا کیا ہے۔ یہ پاکستان کی دوستی کا اثاثہ ہے۔ یہ کل تک کی بات تھی۔ آج افریقہ پر ایک نیا سورج چمک رہا ہے۔ اافریقہ تیزی سے ترقی کی منازل طے کررہا ہے۔ 54ریاستوں کا یک ہی ایجنڈا ہے کہ سماجی، سیاسی اور معاشی روابط کو فروغ دیا جائے۔

شاہ محمود

مزید : صفحہ اول