پچھلی حکومتوں نے کھپت کی بنیاد پر شرح نمو پر توجہ دی نتائج حاصل نہ ہوئے: حفیظ شیخ

  پچھلی حکومتوں نے کھپت کی بنیاد پر شرح نمو پر توجہ دی نتائج حاصل نہ ہوئے: ...

  



اسلام آباد (این این آئی)وزیراعظم کے مشیر برائے خزانہ و محصولات ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے کہا ہے کہ حکومت برآمدات پر مبنی اقتصادی بڑھوتری کے لئے کوششیں کر رہی ہے،ماضی کی حکومتوں نے صرف کھپت کی بنیاد پر بڑھوتری پر توجہ دی جس سے حقیقی اور پائیدار اقتصادی بڑھوتری حاصل نہ ہوسکی۔وہ برطانوی ہائی کمشنر ڈاکٹر کرسٹین ٹرنر سے ملاقات کے دوران گفتگو کررہے تھے۔ برطانوی ہائی کمشنر نے کہا کہ ان کا ملک پاکستان میں اقتصادی اصلاحات کے عمل کی حمایت کرتا ہے۔ معیشت دونوں ممالک کے درمیان مستقبل میں تعاون کا اہم شعبہ ثابت ہو سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دوطرفہ تجارت اور سرمایہ کاری میں اضافہ کے لئے وہ پاکستان کی اقتصادی ٹیم کے ساتھ رابطے کر رہے ہیں۔ برطانیہ کے تاجروں و سرمایہ کاروں اور سیاحوں کو پاکستان جانے کے لئے راغب کرنے کے سلسلے میں پاکستان کے لئے سفری ہدایات میں تبدیلی کردی گئی ہے۔ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے پاکستان کے لئے ٹریول ایڈوائزری میں تبدیلی پر برطانوی ہائی کمشنر کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت وسیع البنیاد اقتصادی اصلاحات کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہے۔ حکومت مارکیٹ میں مداخلت کو کم کرنے اور نجکاری کو فروغ دے رہی ہے۔ یہ شعبہ جات گزشتہ چودہ برسوں میں نظرانداز کئے گئے تھے۔چھ ماہ میں حکومت نے سٹیٹ بنک سے ایک روپیہ قرضہ نہیں لیا۔ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے برطانوی ہائی کمشنر کو میکرو اکنامک استحکام کیلئے اٹھائے جانے والے اقدامات کے بارے میں بھی آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ پانچ برسوں میں پہلی بار پاکستانی برآمدات میں نمایاں اضافہ ہوا ہے۔ بجلی کی قیمتوں میں اضافہ کے باوجود 72 فیصد صارفین کو زرتلافی کی شکل میں قیمتوں میں اضافہ کے اثرات سے بچایا گیا ہے۔

حفیظ شیخ

مزید : صفحہ آخر