خان گڑھ‘ کٹاؤ میں شدت‘ 35ایکڑ باغات دریا برد

  خان گڑھ‘ کٹاؤ میں شدت‘ 35ایکڑ باغات دریا برد

  



مظفرگڑھ (نامہ نگار) دریائے چناب میں پانی کی آمد' خانگڑھ میں دریائی کٹاؤ شدت اختیار کر گیا' 35 ایکٹر آموں کے باغات دریابرد' زمینداروں کی دہائی'حکومت سے عملی اقدامات کی اپیل۔تفصیل کے مطابق گزشتہ کئی دنوں سے دریائے چناب میں پانی کی آمد اور تیز بہاؤ نے خانگڑھ کے نواحی مواضعات موضع پنجاری اور سلیمان پور کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے جبکہ کٹاؤ بھی شدت اختیار کر چکا ہے اور روزانہ درجنوں ایکٹر آموں کے باغات دریا برد ہو رہے ہیں تاہم ایک ہفتہ کے اندر 35 ایکٹر باغات (بقیہ نمبر42صفحہ12پر)

ختم ہو کر رہ گیا ہے جبکہ نشانات تک باقی نہیں رہے دریائی کٹاؤ سے زمیندار چوہدری مقصود' محمود علی' ظفر علی کے 6ایکٹر کے آم کے باغات'سابق ایم پی اے کی بھائی میاں عرفان قریشی کے 5 ایکٹر آموں کے باغات' کریم بخش موہانہ کے 5 ایکٹر آموں کے باغات' میاں رحیم رضا قریشی کے 10 ایکٹر آموں کے باغات' ملک مجاہد ' اخلاق' نذرحسین اور میاں سجاد کے 20 ایکٹر آموں کے باغات دریا برد ہو چکے ہیں جبکہ کٹاؤ کا سلسلہ تاحال شدت سے جاری ہے دوسری جانب چھوٹے زمیندار بھی اس شدت سے جاری کٹاؤ کا شکار ہو چکے ہیں تین بستیاں بھی ختم ہو کر رہ گئی ہیں مقامی لوگوں اور متاثرین نے منتیں مانگنا شروع کردی ہیں جبکہ خیرات کا سلسلہ بھی شروع ہے جبکہ دریا میں پانی کے بہاؤ میں اضافہ ہے ان حلقوں نے پنجاب حکومت سے سپربند کی فوری تعمیر اور کٹاؤ روکنے کیلئے عملی اقدامات کی اپیل کی ہے #

دریا برد

مزید : ملتان صفحہ آخر