صوبہ بھر میں سکول ہیلتھ اینڈ نیوٹریشن سپروائزرز کی 791 آسامیوں پر بھرتی کا فیصلہ

صوبہ بھر میں سکول ہیلتھ اینڈ نیوٹریشن سپروائزرز کی 791 آسامیوں پر بھرتی کا ...

  



ملتان ( وقا ئع نگار) محکمہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کئیر پنجاب نے صوبہ بھر میں سکول ہیلتھ اینڈ نیوٹریشن سپروائزرز کی 791 آسامیوں پر بھرتی کا فیصلہ ایک ہفتے بعد ہی واپس لے لیا (بقیہ نمبر25صفحہ12پر)

ہے۔ذرائع کے مطابق سکولوں کے بچوں کی مختلف بیماریوں کی سکریننگ کے لئے سکول ہیلتھ اینڈ نیوٹریشن سپروائزرز کی خدمات حاصل کرنے پر ڈاکٹری تنظیموں اور ڈاکٹروں کی جانب سے شدید رد عمل سامنے آرہا تھا۔اور ڈاکٹری تنظیموں کی جانب سے کہا جارہا تھا کہ بیماریوں کی سکریننگ کرنا ڈاکٹر کا کام ہے۔مگر نان میڈیکل ملازمین سے یہ کام لیا جارہا ہے۔جس پر نئی بھرتی کا فیصلہ واپس لیا گیا ہے۔سکول ہیلتھ اینڈ نیوٹریشن سپروائزرز کی 514 خالی آسامیوں اور 277 نئی آسامیوں پر بھرتی کے لئے صوبہ بھر کے ڈپٹی کمشنرز کو 23 جنوری کو تحریری احکامات جاری کئے گئے تھے۔277 نئی آسامیوں میں سے فیصل آباد میں 169،ساہیوال میں 71،خوشاب میں 37 آسامیوں پر بھرتی کی جانی تھی۔جن اضلاع میں سکول ہیلتھ اینڈ نیوٹریشن سپروائزرز کی آسامیاں خالی تھیں۔ان میں ملتان میں 10،بہاولپور میں 11،لیہ اور ڈیرہ غازی خان میں 3،3،رحیم یار خان میں 31،وہاڑی میں 18،مظفرگڑھ میں 6،راجن پور میں 9،خانیوال میں 15 آسامیاں خالی ہیں۔سکول ہیلتھ اینڈ نیوٹریشن سپروائزرز کی دیگر آسامیاں اور اضلاع میں خالی ہیں۔سکول ہیلتھ اینڈ نیوٹریشن سپروائزرز کی خالی اور نئی آسامیوں پر بھرتی سکولوں میں بچوں کی ہیلتھ سکریننگ کے پروگرام کو موثر اور مضبوط کرنے کے لئے کی جانا تھیں۔تاہم نئی بھرتی کے احکامات تاحکم ثانی واپس لے لئے گئے ہیں۔

بھرتی

مزید : ملتان صفحہ آخر