غیرقانونی پولیس چھاپے کی تحقیقات کی جائے، آفتاب علی

  غیرقانونی پولیس چھاپے کی تحقیقات کی جائے، آفتاب علی

  



کراچی (کرائم رپورٹر) آغا سیکورٹی سروسز سندھ کے ڈائریکٹر آفتاب علی نے ایک بیان میں الزام عائد کیا ہے کہ پولیس نے ان کے گھر پر غیرقانونی چھاپہ مار کر چادر اور چادر دیواری کے تقدس کو پامال کیا ہے، انہوں نے کہا کہ 29جنوری کی رات 10 بجے ڈیفنس گارڈن فیز1 میں واقع ان کے مکان پر محمود آباد، درخشاں اور بلوچ کالونی تھانوں کی تین موبائل اور 22اہلکاروں پر مشتمل پولیس نے دو بچوں کو غیر قانونی طو رپر حراست میں لینے کے لیے مکان کی گرل کو توڑا اور بچوں کو تھانے میں لے جاکر بند کردیا۔ جسے دوسرے دن کی صبح عدالتی حکم پر بازیاب کرایا گیا۔ اس پولیس پارٹی کی سربراہی سب انسپکٹر زاہد جدون اور ہید کانسٹیبل سندر کررہے تھے،انہوں نے وزیراعلیٰ، گورنر اور آئی جی سندھ سے مطالبہ کیا کہ تحقیقات کراکے اس مبینہ غیرقانونی کام میں ملوث اہلکاروں کے خلاف محکماجاتی کاروائی کی جائے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر