لیڈی ہیلتھ ورکرز کے قتل کی تحقیقات جاری ہے،آئی جی پی

    لیڈی ہیلتھ ورکرز کے قتل کی تحقیقات جاری ہے،آئی جی پی

  



صوابی(بیورورپورٹ) انسپکٹر جنرل آف پولیس خیبر پختونخوا ڈاکٹر ثناء اللہ عباسی نے واضح کر دیا ہے کہ علاقہ پر مولی کے حدود میں لیڈی ہیلتھ ورکرکے قتل کی انکوائری کی جارہی ہے۔عوام کی جان و مال کا تحفظ پولیس کی اولین ترجیح ہے اور اس کے حصول کے لئے خیبر پختونخوا پولیس جانوں کے نذرانے پیش کر رہی ہے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پولیس فورسز نے عملی کر دار ادا کر رہی ہے ملزمان کو جلد قانون کے کٹہرے میں لایا جائیگا ان خیالات کااظہارا نہوں نے گذشتہ شب علاقہ تھانہ میر علی کی حدود میں لیڈی ہیلتھ ورکرز کی قتل کے جاے وقوعہ کے معائنہ کے موقع پر کیا ڈی آئی جی مر دان شیر اکبر خان، ڈی پی او صوابی عمران شاہد، سی ٹی ڈی آفسران اور دیگر حکام بھی اس موقع پر موجود تھے۔ ڈی پی او صوابی عمران شاہد نے ان کو واقعہ سے متعلق تفصیلی بریفنگ دی آئی جی پی نے اس واقعہ کی شدید مذمت کر تے ہوئے پولیس حکام پر زور دیا کہ وہ ملزمان کا جلد از جلد سراغ لگا کر قانون کے کٹہرے میں لایا جائے۔پولیو ٹیموں کو سیکیورٹی فراہم کی جارہی ہے علاقہ بھر میں پولیس سرچ آپریشن کرر ہی ہے دریں اثناء سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے پر مولی میں پولیو مہم کے دوران لیڈی ہیلتھ ورکرز پر حملے کی شدید مذمت کر تے ہوئے کہا کہ متعلقہ حکام اور قانون نافذ کرنے والے ادارے ملزمان کو جلد از جلد گرفتار کر کے ان کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر