اعلیٰ تعلیم کی ترویج میں اساتذہ کا کردار مسلمہ ہے،میاں خلیق الرحمان

اعلیٰ تعلیم کی ترویج میں اساتذہ کا کردار مسلمہ ہے،میاں خلیق الرحمان

  



پشاور(سٹاف رپورٹر)مشیر وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا برائے اعلیٰ تعلیم میاں خلیق الرحمن نے کہا ہے کہ اعلیٰ تعلیم کو صوبے میں عمران خان کے وژن کے مطابق عام کرنے کے لئے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں گے۔ اعلیٰ تعلیم کی ترویج میں اساتذہ کا کردار مسلمہ ہے۔ معیار پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائیگا۔ کالجز کا معیار مذید بہتر بنانے کے لئے ماسٹر پلان پر عمل کیا جائیگا۔ کفایت شعاری کی پالیسی پر سکٹی سے عمل کیا جائیگا۔ محکمہ ہائیر ایجوکیشن میں ہر شعبے کو ڈیجیٹلائز کرانے کے لئے جلد لائحہ عمل جاری کردیا جائیگا۔ کالجز میں بی ایس چار سالہ پروگرام کو مربوط بنانے کے لئے عملی کام شروع کردیا گیا ہے۔ آئندہ سال سے بی ایس کے داخلے آن لائن سسٹم کے ذریعے کئے جائیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے دفتر میں مختلف وفود سے ملاقات کے دوران بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ مشیر اعلیٰ تعلیم میاں خلیق الرحمن نے کہا کہ اساتذہ محکمے کی بہتری کے لئے مخلصانہ کام کریں تاکہ اعلیٰ تعلیم کا نظام حقیقی روح کے ساتھ صوبے میں پروان چڑھیں۔ انہوں نے کہا کہ محکمے میں تبادلے سیشن کے دوران نہیں کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا کا بی ایس سسٹم اس وقت پاکستان کے تمام صوبوں سے بہتر ہیں۔ ستر ہزار طلبا و طالبات اس وقت سرکاری کالجز میں بی ایس چار سالہ پروگرام میں زیر تعلیم ہیں۔ ہر طالب علم کو گھر کی دہلیز پر اعلیٰ تعلیم کے مواقع میسر ہیں۔ انہوں نے کہا صوبے کے تمام کالجز کا دورہ کرکے کالجز کی بہتری کے لئے مذید اقدامات اٹھائے جائیں گے۔ اساتذہ اور دیگر عملے کے لئے تربیت لازمی قرار دیدی گئی ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر