تحریک انصاف سے اتحاد کرنے پر پچھتا رہے ہیں ،مسلم لیگ ق نے سیاسی دھماکہ کر دیا

تحریک انصاف سے اتحاد کرنے پر پچھتا رہے ہیں ،مسلم لیگ ق نے سیاسی دھماکہ کر دیا
تحریک انصاف سے اتحاد کرنے پر پچھتا رہے ہیں ،مسلم لیگ ق نے سیاسی دھماکہ کر دیا

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان مسلم لیگ(ق)کےرہنماءسینیٹر  کامل علی آغا نےکہاہے کہ سینئر قیادت کےساتھ کمیٹی کمیٹی کھیلنا درست اقدام نہیں ہے، تحریک انصاف سے اتحاد پر پچھتارہے ہیں،ہم چاہتے ہیں کہ حکومت کے ساتھ چلیں لیکن شاید حکومت ایسا نہیں چاہتی، پنجاب میں تبدیلی کی کسی سازش کا حصہ نہیں بنیں گے،سازشی ہوتے تو نون  لیگ  کی پہلی آفر پر ہی پرویز الہی وزیراعلی بن جاتے،ہم عثمان بزدارکی اس لئے حمایت کرتے ہیں کیونکہ وہ عمران خان کے نامزد کردہ ہیں لیکن عوام عثمان بزدار اور گورنر پنجاب سے مطمئن نہیں ہیں۔

نجی ٹی وی سے خصوصی گفتگو  کرتے ہوئے سینیٹر کامل علی آغا  نے کہا  کہ تحریک انصاف سے اتحاد پر پچھتارہے ہیں لیکن معاہدہ نبھاتے ہوئے پنجاب میں تبدیلی کی کسی سازش کا حصہ نہیں بنیں گے،سازشی ہوتےتو نون لیگ کی پہلی آفر پرہی پرویز الہی وزیراعلیٰ بن جاتے،ہم عثمان بزدارکی اس لئےحمایت کرتے ہیں کیونکہ وہ عمران خان کے نامزد کردہ ہیں لیکن عوام عثمان بزدار اور گورنر پنجاب سے مطمئن نہیں ہیں،عام آدمی کو تحفظات ہیں،یہ ڈیلیور نہیں کر رہے، ہم اتحاد کو بڑھانا اور اصلاح کی طرف جانا چاہتے ہیں، اتحادیوں کے ساتھ اچھا سلوک ہو گا تو حکومت بہتری کی طرف جائے گی،مسائل حل ہونگے تو ہمارے لئے بھی بہتر ہو گا اور حکومت کے لئے بھی۔ کامل علی آغا نے کہا کہ سینئر قیادت کے ساتھ کمیٹی کمیٹی کھیلنا درست نہیں، ایسا کہا جا رہا تھا کہ مذاکرات ہو گئے ہیں، تمام معاملات ٹھیک ہو گئے ہیں تو پھر کمیٹیوں کا سلسلہ کیوں شروع کیا گیا؟۔انہوں نے کہا کہ ہمارا حکومت کےساتھ ایگریمنٹ بنیادی طور پر یہ تھا کہ مشاورت ہو گی اور روزانہ کی بنیاد پر ہو گیاور  ہر  ایشو پر  مشاورت کے ساتھ آگےچلا جائے گا،ہم حکومت کا حصہ اور پارٹنر بنے  ہیں تو اسکے اندر ہماری ذمہ داری بھی اتنی ہی ہے جتنی تحریک انصاف کی  ہے،ابتدائی شکایت   یہی رہی ہے کہ مشاورت نہیں ہوتی رہی دوسری بات یہ کہ پالیسی میکنگ کے اندر ہماری اِن پٹ  شامل ہو گی لیکن  اس میں بھی کوئی پروگراس  نہیں ہوئی۔انہوں نے کہا کہ دوسری کمیٹی پر ہم نے تو عدم اعتماد نہیں کیا ،،دوسری کمیٹی کے ساتھ تو معاملات بہتری کی طرف جا رہے تھے    اور مشاورت جاری تھی لیکن پھر ایک نئی کمیٹی بنا  دی گئی ہے ،تحریک انصاف کی  سینئر قیادت  پر  مشتمل کمیٹی پر  بھی اِنہوں نے عدم اعتماد کرتے ہوئے بلاجواز ایک نئی اور تیسری کمیٹی بنا  دی ہے جو بلا  جواز ہے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور