حکومت نوازشریف کے لندن قیام میں توسیع کی پابند،واپسی کا فیصلہ میڈیکل بورڈ نے نہیں ڈاکٹرز نے کرنا ہے:رانا ثناءاللہ

حکومت نوازشریف کے لندن قیام میں توسیع کی پابند،واپسی کا فیصلہ میڈیکل بورڈ ...
 حکومت نوازشریف کے لندن قیام میں توسیع کی پابند،واپسی کا فیصلہ میڈیکل بورڈ نے نہیں ڈاکٹرز نے کرنا ہے:رانا ثناءاللہ

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما اوررکن قومی اسمبلی رانا ثناء اللہ خا ن نے کہا ہے کہ نوازشریف کی صحت سے متعلق تمام رپورٹس حکومت کو جمع کرائی گئی ہیں، میڈیکل بورڈ نے نوازشریف کی واپسی کا فیصلہ نہیں کرناوہاں کےڈاکٹرز نے یہ فیصلہ کرناہے،جو رپورٹس ہمارے پاس دستیاب تھیں ہم نے جمع کرادی ہیں،جب تک ڈاکٹرز مطمئن نہیں ہوتے پاکستانی حکومت نوازشریف کے وہاں قیام میں توسیع کی پابند ہے،اب حکومت اگر واپسی کا فیصلہ کرے گی تو یہ بددیانتی ہوگی۔

نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن) کے رہنما رانا ثناء اللہ نے کہا ہے کہ نوازشریف کی صحت سے متعلق تمام رپورٹس حکومت کو جمع کرائی گئی ہیں، میڈیکل بورڈ نے نوازشریف کی واپسی کا فیصلہ نہیں کرنا وہاں کے ڈاکٹرز نے یہ فیصلہ کرنا ہے، جو رپورٹس ہمارے پاس دستیاب تھیں ہم نے جمع کرادی ہیں، علاج اور مدت کا فیصلہ ان ڈاکٹرز نے کرنا ہے،نوازشریف جن کے زیر علاج ہیں۔انہوں نے کہا کہ پلیٹ لیٹس سے متعلق کچھ ٹیسٹوں کی رپورٹس آچکی ہیں اور کچھ کی آنی ہیں،نوازشریف کا علاج مکمل ہوگا تو واپس آجائیں گے،یہاں کے ہسپتالوں میں جو ٹیسٹ ہوتے تھے نتائج پوری دنیا کو پتہ لگ جاتے تھے۔انہوں نے کہا کہ برطانیہ کے ہسپتال ٹیسٹوں کے نتائج اس طرح شیئر نہیں کرتے، نوازشریف کی صحت سے متعلق وہاں کے ڈاکٹرز نے جو بتایا ہے وہ ہم حکومت کو بتا چکے ہیں، جب تک ڈاکٹرز مطمئن نہیں ہوتے، حکومت نوازشریف کے وہاں قیام میں توسیع کی پابند ہے،اب حکومت اگر واپسی کا فیصلہ کرے گی تو یہ بددیانتی ہوگی، آپریشن کا فیصلہ پنجاب حکومت نے نہیں وہاں کے ڈاکٹرز نے کرنا ہے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور