حجاب پہن کر مقابلے میں حصہ لینے کی اجازت نہ دی تو اولمپکس سے دستبردار ہو جائیں گے,وجدان علی کے والد

حجاب پہن کر مقابلے میں حصہ لینے کی اجازت نہ دی تو اولمپکس سے دستبردار ہو ...

لندن (اے پی پی) سعودی عرب کی جوڈوکاز وجدان علی سراج عبدالرحیم شہرکانی کے والد نے کہا ہے کہ اگر ان کی بیٹی کو حجاب پہن کر مقابلے میں حصہ لینے کی اجازت نہ دی گئی تو وہ اولمپکس گیمز سے دستبردار ہو جائیں گی۔ 16 سالہ وجدان 3 اگست کو جوڈو کی 78 کلو گرام کیٹیگری میں ایکشن میں دکھائی دیں گی۔ سعودی حکومت نے کچھ عرصہ قبل کہا تھا کہ ان کی تمام خواتین کھلاڑی اسلامی طرز لباس کی پیروی کریں گی۔ دوسری طرف عالمی جوڈو فیڈریشن کے صدر مارئیاس ویزر نے کہا کے ان کو حجاب کے بغیر مقابلے میں حصہ لینا ہو گا اور جوڈو کھیل میں حفاظتی نقط نظر سے حجاب ممنوع ہے۔ سعودی خاتون کے والد نے سعودی اخبار الوطن سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اگر کمیٹی نے ان کے حجاب اتارنے پر اصرار جاری رکھا تو ان کی بیٹی تین اگست کے مقابلے میں حصہ نہیں لیں گی۔ سعودی حکام اس معاملے کا حل نکالنے کے لیے اولمپکس حکام سے بات چیت کر رہے ہیں لیکن شہرکانی کے مطابق انہیں ابھی تک عالمی اولمپکس کمیٹی سے اس معاملے میں کوئی جواب نہیں ملا۔ یاد رہے کہ سعودی عرب نے پہلی بار لندن اولمپکس کے لیے دو خاتون اتھیلیٹ بھیجی ہیں جن میں ایک جوڈو اور ایک آٹھ سو میٹر کی دوڑ میں حصہ لیں گی۔

مزید : ایڈیشن 1


loading...