گڑھی شاہو نجی ٹی وی کے سحری پروگرام میں شارٹ سرکٹ سے آتشزدگی 5افراد زندہ جل گئے

گڑھی شاہو نجی ٹی وی کے سحری پروگرام میں شارٹ سرکٹ سے آتشزدگی 5افراد زندہ جل ...

لاہور (سپیشل رپورٹر) گڑھی شاہو کے علاقہ میں نجی ٹی وی کے سحری پروگرام کے دوران شارٹ سرکٹ کے باعث آگ لگ گئی جس کے نتیجہ میں 5افراد زندہ جل کر جاں بحق ہوگئے جبکہ 8افراد بری طرح جھلس کر شدید زخمی ہوگئے واقعہ کی اطلاع ملتے ہی ایدھی ایمبو لینس اور ریسکیو 1122کی گاڑیوں موقع پرپہنچ گئیں آگ لگنے سے پورے علاقے میں بھگدڑ مچ گئی۔ بتایاگیا ہے کہ گڑھی شاہو کے علاقہ میں واقعہ ایک نجی ٹی وی کوہ نور کی بلڈنگ میں رمضان المبارک کے خصوصی پروگرام کے تحت محفل نعت کا سحری ٹائم میںپروگرام جاری تھا کہ لوڈشیڈنگ کے باعث جنریٹر کی بجلی سے پروگرام کو جاری رکھا جارہاتھا اس دوران بجلی آئی جب بجلی پر پروگرام کو منتقل کیاگیا تو یک دم شارٹ سرکٹ ہوگیا اور جس سٹوڈیو میں پروگرام جاری تھا وہاں تمام سیٹ لکڑی کا لگا ہوا تھا اور اس کے اوپر سپاٹ لائٹوں میں شارٹ سرکٹ کے باعث یکے بعد دیگر دھماکے ہوئے اور بجلی کی تاروں میں سے آگ نکلنا شروع ہوگئی آگ نے چند سکینڈز میں سٹوڈیو کو اپنی لپیٹ میں لے لیا محفل کے شرکاءمیں بھگدڑ مچ گئی جس کے باعث لوگوں کو اپنی جان بچانے کا موقع نہ مل سکا محفل میں 3 نعت خواں اور 2 شرکاہ محفل موقع پر ہی زندہ جل کر ہلاک ہوگئے جبکہ 8افراد زخمی ہوگئے واقعہ کی اطلاع ملتے ہی امدادی ٹیمیں موقع پرپہنچ گئیں۔اور انہوں نے زخمیوں اور ہلا ک ہونے والوں کی لاشوں کو باہر نکالنا شروع کردیا۔واقعہ کی اطلاع ملتے ہی ڈی سی نورالامین مینگل میوہسپتال پہنچ گئے ذرائع کے مطابق متاثرہ افراد نے جان بچانے کے لیے باہر نکلنا چاہا تو سٹوڈیو کی کنڈی باہر سے بند تھی جس کے باعث وہاں پر موجود افراد بری طرح جھلس گئے شور کی آواز سن کر مقامی افراد اوپر آگئے اور انہوں نے درازہ کھول کر زخمیوں کو باہر نکالا،جبکہ ہلاک ہونے والوں میں 45سالہ قیصر،50سالہ سلمان،40سالہ سیف 24 سالہ کامران سمیت پانچ افراد جاں بحق ہوگئے۔ جبکہ زخمیوںمیں عبدالرشید، قمر حسین، گلزار، آصف، طاہر اور عبدالرحمن وغیرہ آٹھ افراد شدید زخمی ہوگئے جن کو فوری تشویشناک حالت میں مقامی ہسپتا ل داخل کروادیاگیا ہے جہاں پر 6 کی حالت خطرہ سے باہر بتائی جاتی ہے بعدازاں ہلاک ہونے والے اور زخمیوں کے ورثاءبھی اطلاع ملنے پر مقامی ہسپتال میں پہنچ گئے اور لاشوں سے لپٹ کر روتے رہے اورحکومت کو ہاتھ اٹھا اٹھا کر بدعائیں دیتے رہے۔ورثاءنے ہسپتال میں ڈی سی او لاہور کو بتایا ہے کہ بجلی کی لوڈشیڈنگ کے باعث پہلے بھی کتنی جانیں ضائع ہوچکی ہیں۔ سانحہ پر مختلف مکاتب فکر کے لوگوں اور سیاسی جماعتوں کے رہنماﺅں نے گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے مرحومین کے لیے دعائے خیر اور لواحقین کے لیے صبرو تحمل کی دعا کی ہے مختلف سیاسی جماعتوں کے رہنما بھی ہسپتال میں پہنچ گئے ۔ سانحہ گڑھی شاہو میں جل جانے والے پانچوں افراد کی لاشیں و رثاءکے حوالے کردی گئیں سلیمان سلامت پورہ کارہائشی، سیف الرحمن بادامی باغ اور کامران کوٹھیاں باغ کا رہائشی تھا۔

مزید : صفحہ اول


loading...