امریکہ اپنا اسلحہ بیچنے کیلئے دنیا بھر میں دہشتگردی کو فروغ دے رہا ہے‘منور حسن

امریکہ اپنا اسلحہ بیچنے کیلئے دنیا بھر میں دہشتگردی کو فروغ دے رہا ہے‘منور ...

لاہور (نمائندہ خصوصی) امیر جماعت اسلامی پاکستان سید منورحسن نے کہاکہ امریکہ اپنے اسلحہ کی فروخت کے لیے دنیا بھر میں دہشتگردی کو فروغ دے رہاہے جس سے عالمی امن کو شدید خطرہ ہے اور دنیا جنگ کے دھانے پر کھڑی ہے ۔ اسلحہ کی غیر قانونی تجارت میں عالمی امن کا نام نہاد علمبردار سب سے آگے ہے ۔ امریکہ کے سرکاری اور نجی اداروں میں بننے والے مہلک ہتھیار اور جدید اسلحہ دنیا بھر میں ایک خاص منصوبے کے تحت پھیلایا جارہاہے اور امریکہ مسلمانوں کے خلاف یہودی نصرانی اور ہندو دہشتگرد تنظیموں کی سرپرستی کر رہاہے ۔ حکمران فوری طور پر امریکی اتحاد سے نکلنے اور نیٹو سپلائی کی مستقل بندش کا اعلان کریں ۔ امریکی سپلائی نہ روکی گئی تو خطے کو اسلحہ سے پاک اور دہشتگردی سے نجات نہیں ملے گی ۔ ان خیالات کااظہا ر انہوں نے دبئی سے آنے والے ایک وفد سے ملاقات کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں کہاکہ حکمرانوں کی نااہلی ، بددیانتی اور کرپشن کی وجہ سے مہنگائی کا طوفان تھمنے میں نہیں آرہا ۔ غریب پاکستانی بری طرح غربت کی چکی میں پس رہے ہیں ۔ لوگوں کے لیے دو وقت کے کھانے کا انتظام کرنا مشکل ہوگیاہے ۔ حکمران دوبارہ پٹرولیم مصنوعات میں اضافے کی نوید سنا رہے ہیں جس سے مہنگائی میں اضافے کی نئی لہر پیدا ہوئی ہے اور اشیائے صرف کی قیمتوں میں ہونے والے ہوشربا اضافے سے لوگ بلبلا اٹھے ہیں جبکہ حکمران اپنی تمام ذمہ داریوں سے لاتعلق خواب خرگوش کے مزے لے رہے ہیں۔ عام آدمی کی زندگی اجیرن بن چکی ہے ۔ 22-22 گھنٹے ہونے والی لوڈشیڈنگ نے لوگوں کا جینا حرام کر دیاہے ۔دریں اثناءجماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کراچی روانگی سے قبل اپنے ایک بیان میں کہاہے کہ جماعت اسلامی بر سراقتدار آ کر اشیائے خوردو نوش کی قیمتوں میں 30 فیصد کمی کر کے انہیں تین سال کے لیے منجمد کر دے گی اور پٹرولیم مصنوعات ، بجلی ، گیس ، ٹیلی فون بلز پر ناجائز ٹیکسز کا مکمل خاتمہ کر دیا جائے گا ۔ عوام آئندہ انتخابات میں جماعت اسلامی کا ساتھ دیں ۔ انہوں نے کہا کہ روٹی کپڑا مکان کے دعوے داروں نے عوام کو روٹی کی جگہ فاقے ، کپڑے کی جگہ کفن اور مکان کی بجائے انہیں قبرستان میں پہنچایا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ ریلوے جیسے قومی ادارے کو پیپلز پارٹی اور اس کی اتحادی اے این پی نے کھوکھلا کر دیاہے ۔ان کے ساڑھے چار سالہ دور میں متعدد ٹرینیں بند کر دی گئی ہیں اب تو نوبت یہاں تک پہنچ گئی ہے کہ ریلوے کے پاس ٹرینیں چلانے کے لیے ڈیزل بھی نہیں ہے جو لمحہ فکریہ ہے ۔

مزید : صفحہ آخر


loading...