اے جی آفس کے ملازمین کی ہڑتال پنجاب کے سرکاری اداروں کو یوٹیلیٹی بل بروقت ادا نہ کرنے پر 10فیصد جرمانے کا سامنا

اے جی آفس کے ملازمین کی ہڑتال پنجاب کے سرکاری اداروں کو یوٹیلیٹی بل بروقت ادا ...

لاہور(شہباز اکمل جندران) وفاق کے ماتحت اے جی آفس کے ملازمین کی ہڑتال پنجاب حکومت کو بھی مہنگی پڑی، ملازمین کی ہڑتال سے پنجاب حکومت کو یوٹیلٹی بلوں کی ادائیگی میں 10فیصد سرچارج کا سامنا ہے، ٹیلی فون ، بجلی اور گیس کے بلوں کی بروقت ادائیگی کے لیئے بل پاس نہ ہونے کی وجہ سے ادائیگی کی مقررہ تاریخیں گزر گئیں، ذرائع کے مطابق سرکاری یوٹیلٹی بل کیش کی صورت ادا نہیں کیئے جاتے، یوٹیلٹی بل موصول ہوتے ہی تمام صوبائی ادارے اپنے اپنے طور بلوں کی ادائیگی کی خاطر اے جی آفس سے رجوع کرتے ہیں ، جہاں سے اس حوالے سے بل منظور ہونے کے بعد اسے یوٹیلٹی بلوں کے ساتھ لف کرکے اسٹیٹ بینک یاپھر نیشنل بینک میں جمع کروادیا جاتا ہے، اور اسٹیٹ بینک یا نیشنل بینک ان بلوں کے عوض حکومتی ہیڈ سے رقم وصول کرتے ہیں ،لیکن اے جی آفس کے ملازمین کی ہڑتا ل کے باعث یوٹیلٹی بلوں کی بروقت ادائیگی کے بل منظورنہ ہوسکے ،اور حکومت کو 10فیصد جرمانے کا سامنا کرناپڑا، لیکن سول سیکرٹریٹ کے سرکاری بلوں کی ادائیگی کے ذمہ دار شعبہ ویلفیئر کے ایک افسر کا کہناتھا کہ یہ بات درست ہے کہ اے جی آفس کے ملازمین کی ہڑتال کے باعث یوٹیلٹی بلوں کی ادائیگی کی مد میں پنجاب حکومت کو 10فیصد جرمانے کا سامنا ہے،لیکن اس سلسلے میں حکومتی سطح پر معاملہ اٹھایا جائیگا تاکہ جرمانے سے بچا جاسکے

مزید : صفحہ آخر


loading...