سری نگر کی مقامی مسجد میں فوج نے ٹیئرگیس شیل پھینکنے کے علاوہ مسجد کے شیشے بھی توڑ دئے

سری نگر کی مقامی مسجد میں فوج نے ٹیئرگیس شیل پھینکنے کے علاوہ مسجد کے شیشے ...

سری نگر(کے پی آئی) سری نگرشہر خاص کے حبہ کدل علاقے میں سی آر پی ایف اہلکاروں نے علاقے میں اودھم مچاکر متعدد رہائشی مکانوں اور گاڑیوں کی توڑ پھوڑ کی جبکہ کئی گھروں میں گھس کرمکینوں کو ہراساں کیا۔مقامی لوگوں کے مطابق انہوں نے یہیں پر اکتفا نہیں کیا بلکہ ایک مقامی مسجد میں ٹیئرگیس شیل پھینکنے کے علاوہ مسجد کے شیشے بھی توڑ دئے۔مقامی لوگوں کے مطابق سی آر پی ایف اہلکاروں نے کسی وجہ کے بغیر سڑکوں پر کھڑی گاڑیوں کی توڑ پھوڑ شروع کی اور اس کے بعد رہائشی مکانوں کا رخ کیا جس دوران کئی مکانوں کی کھڑکیاں اور شیشے چکناچور کئے۔انہوں نے کشمیر عظمی کو بتایا کہ سی آر پی ایف اہلکاروں نے لاٹھیوں اور بندوق بٹھوں سے سڑکوں پر کھڑی گاڑیوں کے شیشے توڑدئے ۔

اور جب یہاں ان کا جی نہیں بھرا توانہوں نے کئی گھروں میں گھس کر توڑ پھوڑ کی اورمکینوں کوہراساں کیا ۔کئی لوگوں نے بتایا کہ سی آر پی ایف اہلکاروں نے کئی گھروں میں گھس کر خواتین کو بھی نہیں بخشااور انہیں گالیاں دیں۔مقامی لوگوں کے مطابق شہر کے دیگر علاقوں کی طرح حبہ کدل میں بھی شبانہ احتجاج اور مساجد میں ترانوں کی گونج آئے روز سنائی دیتی رہتی ہے ،جو پولیس اور سی آر پی ایف اہلکاروں کو ناگوار گزرتا ہے جس کے نتیجے میں آغا حمام مسجد کے اندر بھی ٹیئرگیس شیل پھنکے گئے اورمسجد کے شیشے بھی توڑے گئے۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ اس صورتحال کے پیش نظر لوگ سہم گئے تاہم جب صبر کا پیمانہ لبریز ہوگیا تو لوگ گھروں سے باہر آئے اور سی آر پی ایف کے خلاف احتجاج کیا۔احتجاجی مظاہرین میں خواتین بھی شامل تھیں۔

مزید : عالمی منظر


loading...