فلور ملز ایسوسی ایشن نے گندم کی برآمدات پر ریبیٹ کو خوش آئند قرار دیدیا

فلور ملز ایسوسی ایشن نے گندم کی برآمدات پر ریبیٹ کو خوش آئند قرار دیدیا

کراچی( اکنامک رپورٹر ) گندم کی برآمدات پر 120 ڈالر فی ٹن ریبیٹ دینے کے حکومتی فیصلے سے برآمد کنندگان میں خوشی کی لہر دوڑ گئی۔ بڑے پیمانے پر گندم کی برآمدات کے منصوبے بننا شروع ہو گئے۔ آل پاکستانفلور ملز ایسو سی ایشن کے چیئرمین افتخار مٹو کا کہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے گندم کی برآمدات میں اضافے کے لئے اٹھائے گئے اقدام کا خیرمقدم کرتے ہیں۔ اس فیصلے سے گندم کی برآمدات میں اضافہ ہو گا جس سے غیر ملکی زرمبادلہ پاکستان آئے گا جو معیشت کے لئے بہتر ہے۔ ان کا مذید کہنا تھا کہ عالمی مارکیٹ میں گندم سستی ہونے کے سبب پاکستان سے گندم کی برآمدات نہ ہونے کہ برابر رہ گئی تھی جبکہ حکومت کے پاس 30لاکھ ٹن گندم اضافی ذخائر میں موجود ہے۔ دوسری جانب ہولسیل گروسرز ایسوسی ایشن کے چئرمین انیس مجید کا کہنا ہے کہ گندم کی برآمد پر ریبیٹ دینے کے بجائے حکومت مقامی مارکیٹ میں آٹے پر سبیڈی دیتی تو فی کلو آٹا 12 روپے ہو جاتا۔ حکومتی فیصلے سے صرف ایکسپورٹرز ہی زیادہ آمدن کے مزے لوٹے گے اور عوام کا سستے آٹا خریدنے کا خواب پورا نہیں ہو سکے گا۔

مزید : کامرس


loading...