تخت بھائی میں 12 سالہ بچی سورہ میں دینے کی کوشش ناکام

تخت بھائی میں 12 سالہ بچی سورہ میں دینے کی کوشش ناکام

تخت بھائی (نمایندہ پاکستان)تخت بھائی پولیس نے 12 سالہ کم سن بچی کو سورہ میں دینے کی کوشش ناکام بنادی پولیس نے دلہن بچی کو تحویل میں لیکر جرگہ ممبران سمیت 8ملزمان کو حراست میں لے لیا ہے جبکہ 5ملوث دیگر ملزمان فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے ہیں تفصیلات کے مطابق گزشتہ20رمضانالمبارک سپین خاک چراٹ کی17سالہ مسماۃ عائشہ دختر عمر شاہ تخت بھائی کے نوجوان کلیم شاہ ولد سید شاہ ساکن انور کوٹے کے ساتھ بھاگ کر پسند کی شادی کرلی تھی جس پر جرگہ نے دونوں خاندانوں کے مابین تنازعے کے خاتمے کے لئے سید شاہ کے کمسن بیٹی اور نوجوان کلیم شاہ کی بہن مسماۃ مینہ گل کو عمر شاہ کے بیٹے کو سورہ میں دینے اور 5لاکھ50ہزار روپے نقد بطور جرمانہ دینے کے فیصلے کے تحت آج 12سلہ مینہ گل کو باقائدہ دلہن بنا کر رخصت کر رہے تھے کہ پولیس کو اطلاع ملی پولیس نے بر وقت کاروائی کرتے ہوے کمسن بچی مینہ گل کو تحویل میں لے لیا جبکہ جرگہ ممبران اورملزمان سمیت آٹھ افراد کو حراست میں لے لیا پولیس نے ملزمان سید شاہ قابل شاہ محترم شاہ کلیم شاہ ذولفقار شاہ مسماۃ حسن پری عمر شاہ حسین شاہ عثمان شاہ فیض اللہ زین اللہ پیر جمشید اور عبداللہ کے خلاف 310A/456چائلڈ میرج ری کرنٹ ایکٹ کے تحت مقدمات درج کر کے ان کے خلاف کاروائی شروع کردی ہے جبکہ دیگر ملزمان کی گرفتاری کے لئے ٹیمیں روانہ کردی ہے

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...