قندیل بلوچ قتل کیس، ملزمان کو لانے والا ٹیکسی ڈرائیور مفتی عبدالقوی کا ماموں زاد نکلا

قندیل بلوچ قتل کیس، ملزمان کو لانے والا ٹیکسی ڈرائیور مفتی عبدالقوی کا ماموں ...
قندیل بلوچ قتل کیس، ملزمان کو لانے والا ٹیکسی ڈرائیور مفتی عبدالقوی کا ماموں زاد نکلا

  


ملتان (مانیٹرنگ ڈیسک) قندیل بلوچ قتل کیس میں اہم پیشرفت ہوئی ہے اور دوران تفتیش انکشاف ہوا ہے کہ ملزمان کو ملتان لانے والا ٹیکسی ڈرائیور عبدالباسط مفتی عبدالقوی کا ماموں زاد بھائی ہے۔

نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق قندیل بلوچ قتل کیس کے ملزمان وسیم اور حق نواز کو ملتان لانے والے ٹیکسی ڈرائیور عبدالباسط نے 27 جولائی کو پولیس کو از خود گرفتاری دی تھی ۔ عبدالباسط کا کہنا تھا کہ قتل کی رات ملزمان اس کی کار 3200 روپے کرایے پر ملتان لائے تھے اور وہ قتل سے بے خبر تھا جبکہ ملزمان نے قتل کے بعد اسی کی کار میں واپس شاہ صدرالدین کا سفر کیا۔

نوجوان لڑکی کے پیار میں پاگل آدمی نے بیوی بچوں کو چھوڑدیا، لیکن یہ محبوبہ دراصل کون تھی؟ حقیقت سامنے آئی تو زندگی کا سب سے بڑا جھٹکا لگ گیا، آئندہ کبھی غلطی سے بھی۔۔۔

دوران تفتیش پولیس کو معلوم ہوا ہے کہ ٹیکسی ڈرائیور عبدالباسط بھی ڈیرہ غازی خان کے علاقے شاہ صدر دین کا رہائشی ہے جبکہ اس کے والد کا نام عبدالحق قریشی ہے اور وہ مفتی عبدالقوی کا ماموں زاد ہے۔ مفتی عبدالقوی سے رشتہ داری کا پتا چلنے کے بعد پولیس نے ٹیکسی ڈرائیور عبدالباسط کے خلاف تحقیقات کا دائرہ مزید وسیع کردیا ہے ۔

’میں اس طریقے سے بیویوں کو خوش کرتا ہوں‘ تین بیویوں والے مرد کی وہ کہانی جسے پڑھ کر ہر مرد کا دل کرے گا کہ وہ بھی ایسے ہی کرے

واضح رہے کہ متنازعہ ویڈیوزسے شہرت پانے والی ماڈل و اداکارہ قندیل بلوچ کو 14 جولائی کی رات اس کے سگے بھائی وسیم نے اپنے کزن حق نواز کے ساتھ مل کر قتل کردیا تھا ۔ دوران تفتیش ملزم نے پولی گرافک ٹیسٹ میں اعتراف کیا تھا کہ قندیل بلوچ کی مفتی عبدالقوی کے ساتھ متنازعہ ویڈیو سامنے آنے کے بعد بیرون ملک مقیم بھائی کے مجبور کرنے پر بہن کو قتل کیا ۔

مزید : ملتان


loading...