’’شادی کے بغیر بھی مردوں کو خواتین سے تعلقات قائم کرنے کی اجازت ہے اگر۔۔۔‘‘اسلامی سکالر نے ایسا بیان دیدیا کہ ہنگامہ برپا کر دیا

’’شادی کے بغیر بھی مردوں کو خواتین سے تعلقات قائم کرنے کی اجازت ہے ...
’’شادی کے بغیر بھی مردوں کو خواتین سے تعلقات قائم کرنے کی اجازت ہے اگر۔۔۔‘‘اسلامی سکالر نے ایسا بیان دیدیا کہ ہنگامہ برپا کر دیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک مسلم سکالر نے ایسا بیان دے دیا ہے کہ دنیا میں ہنگامہ برپا ہو گیا ہے۔ برطانوی اخبار ”ڈیلی میل “کی رپورٹ کے مطابق برطانوی شہر کارڈف کی ایک مسجد کے امام علی حمودا کا کہنا ہے کہ ”مسلمان ان خواتین سے بغیر نکاح کے بھی جسمانی تعلق قائم کر سکتے ہیں جو جنگ میں ان کے ہاتھ آئیں اور ان کی غلام ہوں۔“ کارڈف سے دو سال قبل تین نوجوان شام جا کر داعش میں شامل ہو گئے تھے۔

برطانوی اخبار کے مطابق علی حمود کے متعلق شبہ ظاہر کیا جاتا ہے کہ ان تینوں نوجوانوں کی ذہن سازی بھی انہوں نے ہی کی تھی۔ حالیہ متنازعہ بیان انہوں نے ایک مخصوص گروپ کو دیا ہے جنہیں وہ دیگر لوگوں سے الگ خفیہ تعلیم دیتا ہے۔اس گروپ میں زیادہ تر 13سے 18سال کے لڑکے شامل ہیں۔ علی حمود اس گروپ کو تعلیم دیتا ہے کہ ”قیامت قریب آ چکی ہے، قیامت سے قبل بہت ساری جنگیں ہوں گی جو آج کل ہم دیکھ رہے ہیں۔ان جنگوں کے نتیجے میں بہت سی خواتین غلام بنائی جائیں گی۔ ان غلام خواتین کے ساتھ جنسی تعلق قائم کئے جاسکتے ہیں۔“ علی حمود کے اس بیان پر برطانیہ میں ہنگامہ برپا ہو گیا ہے ۔ ایک اور مسلم سکالر امام شاہد رضا کا کہنا ہے کہ ”غلامی انسانی عظمت کے خلاف ہے اور صرف داعش کے حامی ہی اس طرح کا دعویٰ کر سکتے ہیں۔اسلام کے 99فیصد علماءکرام اس بات پر متفق ہیں کہ غلامی کا تصور اسلام کی تعلیمات کے خلاف ہے، صرف چند شدت پسندوں کے حامی سکالر ایسے ہیں جو اس سے متفق نہیں ہوتے۔ یہ لوگ احادیث کا غلط حوالہ دیتے ہیں اور لوگوں کو گمراہ کرتے ہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -