کشمیری حریت قیادت نے 3بھارتی نیوزچینلزکے مکمل بائیکاٹ کی اپیل کر دی

کشمیری حریت قیادت نے 3بھارتی نیوزچینلزکے مکمل بائیکاٹ کی اپیل کر دی
کشمیری حریت قیادت نے 3بھارتی نیوزچینلزکے مکمل بائیکاٹ کی اپیل کر دی

  


سری نگر(مانیٹرنگ ڈیسک) کشمیری حریت پسند قیادت سید علی شاہ گیلانی، میرواعظ مولوی عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے کشمیری عوام اور ہندوستانی مسلمانوں سے اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ 3بھارتی نیوزچینلز’’ زی نیوز، ٹائمز ناؤ اور نیوز ایکس ‘‘ کشمیری مسلمانوں کی جدوجہد آزادی اور تحریک حق خود ارادیت کے خلاف مسلسل دشمنی والا اور متعصبانہ رویہ اپنائے ہوئے ہیں لہذا ان کا بائیکاٹ کرتے ہوئے کسی قسم کا تعاون نہ کیا جائے ۔

اپنے مشترکہ بیان میں کشمیری راہنماؤں کا کہنا تھا کہ یہ نیوز چینل ایک مخصوص ایجنڈے پر کام کررہے ہیں اور اِن کا مقصد مسئلہ کشمیر کے تئیں غلط تصویر پیش کرکے بین الاقوامی برادری خاص طور پر ہندوستان کی رائے عامہ کو گمراہ کرنا اور ان کو اصلی حقائق سے بے خبر رکھنا ہے۔کشمیری حریت پسند راہنماؤں نے کشمیری عوام کو تلقین کی ہے کہ وہ خود ان چینلوں کو دیکھنے اور ان کے نمائندوں کو اپنا تعاون دینے سے دور رہیں اور ان کے مباحثوں میں بھی شرکت سے گریز کریں۔انہوں نے کشمیری عوام کی جانب سے رواں احتجاجی لہر کے دوران کرفیو، بندشوں ، سختیوں اور پابندیوں کے باوجود پوری مقبوضہ وادی میں پر امن احتجاجی جلوسوں اور مظاہروں کے اہتمام پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہماری حق و انصاف پر مبنی جدوجہد ایک نازک مرحلے سے گزر رہی ہے اوراپنے مقدس نصب العین ،حق خودارادیت کے حصول کے لئے بلا امتیاز عوام ہر طرح کی قربانیاں پیش کررہے ہیں ،ہم نے اپنی آزادی کی منزل ہر قیمت پر حاصل کرنے کا عزم کررکھا ہے۔

انہوں نے مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ تحریک آزادی کی صفوں میں ایسے عناصر بھی داخل ہو نے کی کوشش کررہے ہیں جو تحریکی اہداف ،اجتماعیت اور وحدت کو زک پہنچانے میں سرگرم عمل ہو گئے ہیں۔انہوں نے جموں وکشمیر کے مختلف علاقوں میں فرضی اور جعلی پوسٹرز چسپاں کئے جانے کی اطلاعات پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے تمام محب وطن اور آزادی کی جدوجہد کرنے والے کشمیری عوام سے اپیل کی کہ وہ ان قوتوں کی چالوں سے خبردار رہیں اور انہیں اپنے بھر پور اتحاد اور یکجہتی کے مظاہرہ سے ناکام بنائیں جو آزادی کی جدوجہد کو تقیسم کرنے کی سازشیں کر رہے ہیں ۔

مزید : بین الاقوامی


loading...