پی آئی اے کیس کو سنجیدگی سے لے رہے ہیں،گزشتہ 10 سال کی آڈٹ رپورٹ کا انتظار ہے، چیف جسٹس پاکستان

پی آئی اے کیس کو سنجیدگی سے لے رہے ہیں،گزشتہ 10 سال کی آڈٹ رپورٹ کا انتظار ہے، ...
پی آئی اے کیس کو سنجیدگی سے لے رہے ہیں،گزشتہ 10 سال کی آڈٹ رپورٹ کا انتظار ہے، چیف جسٹس پاکستان

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پی آئی اے سربراہ تعیناتی اورنجکاری کیخلاف کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ پی آئی اے کے کیس کو سنجیدگی سے لے رہے ہیں،گزشتہ 10 سال کی آڈٹ رپورٹ کاانتظارہے،پی آئی اے آڈٹ رپورٹ میں کرپشن کی نشاندہی ہوگی ۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں بنچ نے پی آئی اے سربراہ تعیناتی اورنجکاری کیخلاف ازخودنوٹس کی سماعت کی۔

درخواست گزار کے وکیل نے عدالت کے روبروموقف اختیار کیا کہ مشرف رسول 1999 میں سردارمہتاب عباسی کے چیف آف سٹاف تھے،مشرف رسول مطلوبہ تعلیمی قابلیت پرپورانہیں اترتے،مشرف رسول کوایئرلائن میں کام کرنے کا 25سالہ تجربہ بھی نہیں،مشرف رسول تعلیمی اعتبارسے طبی معالج ہیں۔

چیف جسٹس پاکستان نے مشرف رسول کی بطورسی ای او پی آئی اے تعیناتی پرسخت برہمی کا اظہار کیا،جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ مشرف رسول کی تعیناتی میں قوانین کی دھجیاں اڑائی گئیں ۔

چیف جسٹس نے کہا کہ بڑا ڈھونڈ کرپی آئی اے کاسربراہ لگایاہے،یہ تو سیدھا سادہ نیب کا کیس ہے،مجھے بتایا گیا کہ ایئرلائن سے براہ راست 14 لاکھ تنخواہ بھی وصول کرتے ہیں، نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ عرفان نعیم منگی اس معاملے کی انکوائری کررہے ہیں۔

مشرف رسول نے عدالت سے استدعا کی کہ مجھے وکیل کرنے کاموقع دیاجائے۔چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ آپ بتائیں سردارمہتاب عباسی کےساتھ کیاتعلق ہے؟،آپ مسلسل عدالت کودھوکادے رہے ہیں۔

چیف جسٹس نے کہا کہ نعیم بخاری کووکیل کرکے آجائیں، قومی ایئر لائن کی جانب سے وکیل نعیم بخاری پیش ہوئے۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہاکہ پی آئی اے اتنی بھاری فیس پروکیل کیوں کررہی ہے؟،بخاری صاحب!آپ نے شاید کیس مفت لیاہو،اس پر نعیم بخاری نے کہا کہ فیس ڈیم فنڈمیں دینے کےلئے لے رہاہوں۔

چیف جسٹس نے استفسار کیا بخاری صاحب اگر آپ وکیل ہیں تو آیندہ کابینہ کیسے تعیناتی کا جائزہ لے گی؟،نعیم بخاری کی عدالت میں کارکردگی اچھی نہ ہوتی تو آج بہت کچھ ویسا نہ ہوتا جیسا ہے،

چیف جسٹس نے کہا کہ شمالی علاقہ جات جانے والوں سے 32 ہزار وصول کیے جاتے ہیں،گلگت بلتستان کے عوام چاہتے ہیں پی آئی اے کا کرایہ کم ہو ۔

چیف جسٹس نے کہا کہ کووارنٹو درخواست میں آپکو معطل نہیں کررہے،عدالت کوئی غلط مثال قائم نہیں کرنا چاہتی،نیب مشرف رسول کےخلاف تحقیقات جاری رکھے۔

سپریم کورٹ نے شمالی علاقہ جات کیلئے پی آئی اے کے زائد کرایوں پر ایئر لائن کو نوٹس جاری کر دیا اورپی آئی اے سربراہ کی تعیناتی ونجکاری کیخلاف سماعت پیرتک ملتوی کردی۔

مزید : اہم خبریں /قومی /علاقائی /اسلام آباد