سچ ہے نوازشریف ہسپتال میں علاج سے ہچکچارہے تھے،نگران وزیر داخلہ پنجاب

سچ ہے نوازشریف ہسپتال میں علاج سے ہچکچارہے تھے،نگران وزیر داخلہ پنجاب
سچ ہے نوازشریف ہسپتال میں علاج سے ہچکچارہے تھے،نگران وزیر داخلہ پنجاب

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)نگران وزیر داخلہ پنجاب شوکت جاوید نے کہا ہے کہ یہ سچ ہے نوازشریف ہسپتال میں علاج سے ہچکچارہے تھے، نوازشریف کی حالت اتنی سنجیدہ نہیں کہ بیرون ملک بھیجاجائے،ضرورت پڑی تومرض کی تفصیلات باہر سے منگوائی جاسکتی ہیں۔

نگران وزیر داخلہ پنجاب شوکت جاوید نے کہا کہ پاکستان میں بھی اچھے ڈاکٹرزہیں،یہاں ہرطرح کاعلاج ہوسکتا ہے،ان کا کہناتھا کہ جب تک ڈاکٹرز کہیں گے نوازشریف ہسپتال میں رہیں گے۔

شوکت جاوید نے کہا کہ نواز شریف کو ڈاکٹروں کی ہدایات پرپمز ہسپتال میں رکھا گیا ہے،رپورٹس کے مطابق نوازشریف جلدٹھیک ہوجائیں گے۔

شوکت جاویدکا کہناتھا کہ نوازشریف کی تیمارداری کیلئے مریم نوازکی درخواست نہیں ملی۔

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور