ایم کیوایم نے حمایت کے بدلے پی ٹی آئی کو بڑے مطالبات پیش کردیئے ،نجی ٹی وی چینل نے دعوی کر دیا

ایم کیوایم نے حمایت کے بدلے پی ٹی آئی کو بڑے مطالبات پیش کردیئے ،نجی ٹی وی ...
ایم کیوایم نے حمایت کے بدلے پی ٹی آئی کو بڑے مطالبات پیش کردیئے ،نجی ٹی وی چینل نے دعوی کر دیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)انتخابات میں کامیابی کے بعد حکومت سازی کا مرحلہ جاری ہے اوراسی سلسلہ میں ایم کیوایم اورپی ٹی آئی کی گزشتہ روز ہونے والی ملاقات کی اندرونی کہانی منظر عام پر آگئی ہے جس کے مطابق متحدہ نے وفاق میں حمایت دینے کے لئے پی ٹی آئی سے بڑے مطالبات کر دیئے ہیں۔تاہم دوسری طرف تحریک انصاف نے ایسے مطالبات کی تردید کر دی ہے ۔

نجی ٹی وی چینل دنیا نیوز نے ذرائع کےحوالے سےدعوی کیا ہے کہ ایم کیوایم نے حمایت کے بدلے بڑے مطالبات پیش کردیئے ہیں ،متحدہ کی جانب سے مطالبہ کیا گیا کہ ان کے خلاف ٹارگٹڈ آپریشن بندکیا جائے اور لاپتہ کارکنوں کو بازیاب کرایاجائے۔جس پر پی ٹی آئی کاکہنا تھا کہ تحریری لسٹ دے دیں قانون کے مطابق کام کیا جائے گا،ایم کیو ایم کا مزید کہنا تھا کہ  سندھ کے شہری علاقوں میں کوٹہ سسٹم فی الفورختم کیاجائے جبکہ حیدرآبادمیں جامعہ کے قیام اورمیئرکے روکے گئے فنڈجاری کئے جائیں،جس پر پی ٹی آئی وفد نے جواب دیا کہ ہرضلع میں جامعہ بنائیں،وفاق سپورٹ کرے گا۔

رپورٹ کے مطابق ایم کیو ایم نے مزید مطالبہ کیا کہ الیکشن سے قبل 2اور کل 172 دفاترمسمارکیے گئے،نئے دفاتربنانے کی اجازت دی جائے۔جس پر پی ٹی آئی  کا کہنا تھا کہ اس معاملے پر پارٹی مشاورت کے بعد ہی کچھ کہاجا سکتا ہے ۔اس کے علاوہ ایم کیوایم نے کراچی کے12 حلقے دوبارہ کھولنے کابھی مطالبہ کیا،جس پر  تحریک انصاف کے رہنماؤں کا کہنا تھا کہ جوحلقہ چاہیں کھلوائیں،حکومتی سطح پرخط لکھ کرشکایات دورکریں گے۔

دوسری طرف پاکستان تحریک انصاف کے رہنما  جہانگیر ترین کا کہنا تھا کہ گزشتہ روز میں ہونے والی ملاقات میں متحدہ کی جانب سے کوئی مطالبات پیش نہیں کئے گئے اور ایم کیوایم نے 2 دن کا وقت  پارٹی مشاورت کے لئے مانگا تھا۔ 

مزید : قومی /سیاست /علاقائی /اسلام آباد