تحریک لبیک کتنے حلقوں میں ن لیگ کی شکست کی وجہ بنی؟ جان کر شہباز شریف اور نواز شریف دونوں کے ہوش اڑ جائیں گے

تحریک لبیک کتنے حلقوں میں ن لیگ کی شکست کی وجہ بنی؟ جان کر شہباز شریف اور نواز ...
تحریک لبیک کتنے حلقوں میں ن لیگ کی شکست کی وجہ بنی؟ جان کر شہباز شریف اور نواز شریف دونوں کے ہوش اڑ جائیں گے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) تحریک لبیک پاکستان عام انتخابات میں اگرچہ قومی اسمبلی کی ایک بھی نشست نہیں جیت سکی تاہم ووٹوں کی مجموعی تعداد کے لحاظ سے وہ پنجاب کی تیسری اور پورے ملک کی پانچویں بڑی جماعت بن کر سامنے آئی ہے۔ اس نے پنجاب میں 19لاکھ اور پورے ملک میں 22لاکھ ووٹ حاصل کیے ہیں۔ اس نے جس سیاسی جماعت کو سب سے زیادہ نقصان پہنچایا ہے وہ مسلم لیگ ن ہے۔ عام تاثر ہے کہ مذہبی طبقہ مسلم لیگ کا حامی رہا ہے جسے تحریک لبیک نے آ کر توڑ دیا۔ دی نیوز کے مطابق اگر انتخابی نتائج کا تجزیہ کیا جائے تو تحریک لبیک قومی اسمبلی کی19نشستوں پر مسلم لیگ ن کی شکست کا سبب بنی ہے۔ ان حلقوں میں مسلم لیگ ن جتنے ووٹوں سے ہاری، اس سے کہیں زیادہ تحریک لبیک کے امیدواروں نے حاصل کیے۔ اگر تحریک لبیک کے امیدوار ان حلقوں میں نہ ہوتے تو لامحالہ ان ووٹروں کی اکثریت ن لیگ کی طرف جاتی اور وہ یہ نشستیں جیتنے میں کامیاب ہو جاتی۔اگر بہت محتاط تجزیہ کیا جائے تو ان 19میں سے 13نشستوں پر مسلم لیگ ن کی فتح یقینی تھی اگر وہاں تحریک لبیک کے امیدوار نہ ہوتے۔

رپورٹ کے مطابق اس صورتحال کی ابتدائی جھلک ہم نے حلقہ این اے 120کے ضمنی انتخابات میں دیکھی تھی جب میاں نواز شریف نے یہ نشست خالی کی۔ تب تحریک لبیک نے اس حلقے سے 14ہزار ووٹ لیے تھے۔ عام انتخابات میں جن نشستوں پر مسلم لیگ ن کے امیدوار تحریک انصاف کے حاصل کردہ ووٹوں سے کہیں کم مارجن سے ہارے ان میں این اے 13مانسہرہ، این اے 57راولپنڈی، این اے 66جہلم، این اے 87حافظ آباد، این اے 102فیصل آباد، این اے 108فیصل آباد، این اے 110فیصل آباد، این اے 118ننکانہ صاحب، این اے 115شیخوپورہ، این اے 131لاہور، این اے 140قصور اور دیگر حلقے شامل ہیں۔ ان میں کئی ایسے حلقے بھی ہیں جہاں سے مسلم لیگ ن کے اہم رہنماءانتہائی کم ووٹوں سے ہارے۔ لاہور کے حلقہ این اے 131سے ن لیگ کے خواجہ سعد رفیق نے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان سے صرف 680ووٹوں سے شکست کھائی جبکہ یہاں تحریک لبیک کے امیدوار سید مرتضیٰ حسن نے 9ہزار 780ووٹ حاصل کیے۔ این اے 57میں سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے 1لاکھ 24ہزار 703ووٹ لیے۔ ان کے مدمقابل تحریک انصاف کے امیدوار صداقت علی عباسی کو 1لاکھ 36ہزار 249ووٹ ملے۔ یوں شاہد خاقان عباسی کو یہاں 11ہزار 546ووٹوں سے شکست ہوئی جبکہ تحریک لبیک کے امیدوار جاوید اختر عباسی نے اس حلقے سے 27ہزار 693ووٹ حاصل کیے۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد