’اب کسی بھی غیر ملکی کے اقامہ میں توسیع نہیں ہوگی جب تک وہ۔۔۔‘ سعودی حکومت نے اعلان کردیا، جان کر ملک میں مقیم پاکستانی شدید پریشان ہوجائیں گے کیونکہ۔۔۔

’اب کسی بھی غیر ملکی کے اقامہ میں توسیع نہیں ہوگی جب تک وہ۔۔۔‘ سعودی حکومت ...
’اب کسی بھی غیر ملکی کے اقامہ میں توسیع نہیں ہوگی جب تک وہ۔۔۔‘ سعودی حکومت نے اعلان کردیا، جان کر ملک میں مقیم پاکستانی شدید پریشان ہوجائیں گے کیونکہ۔۔۔

  

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی وزارت محنت و سماجی ترقی اور وزارت ہاﺅسنگ کی جانب سے غیر ملکیوں کے لئے اعلان کیا گیا ہے کہ اب اقامے کا اجراءیا تجدید صرف اسی صورت میں ممکن ہو گی جب کرائے داری کے معاہدے کی ”ایجار نیٹ ورک“ میں رجسٹریشن ہو گی اور اس نیٹ ورک کے ذریعے اس معاہدے کی تصدیق ہو گی۔

گلف نیوز کے مطابق یہ اہم پیش رفت فروری 2017ءمیں کاﺅنسل آف منسٹرز کی جانب سے کئے گئے فیصلے کے نفاذ کے طور پر سامنے آئی ہے، جس میں وزارت محنت کو پابند بنادیا گیا تھا کہ ورک پرمٹ کا اجراءیا تجدید اسی صورت میں کیا جائے جب ہاﺅس رینٹ معاہدہ ”ایجار نیٹ ورک“ میں رجسٹرڈ ہو اور اس کی تصدیق ممکن ہو۔ تازہ ترین فیصلے کی روشنی میں ستمبر کے مہینے سے اس نئے ضابطے کا نفاذ ہوجائے گا۔

اس سلسلے میں متعلقہ وزارتیں ایک آگاہی مہم کا آغاز بھی کریں گے جس میں غیر ملکیوں کو بتایا جائے گا کہ وہ ایجار نیٹ ورک میں اپنے ہاﺅس رینٹ معاہدے کی رجسٹریشن اور تصدیق کروائیں۔ واضح رہے کہ ایجار ایک الیکٹرونک نیٹ ورک ہے جس کا مقصد کرائے داری کے نظام کو بہتر اور شفاف بنانا ہے جبکہ اس کے استعمال سے کرائے داروں، مکان مالکان اور رئیل اسٹیٹ ایجنٹوں کیلئے بھی سہولت پیدا ہوگی۔ ایجار پروگرام کے ذریعے کرائے کی ادائیگی بھی الیکٹرونک طریقے سے ماہانہ، سہ ماہی یا ششماہی بنیادوں پر کی جاسکتی ہے۔ اس سہولت کے استعمال سے کرایہ داروں اور مکان مالکان کو کیش کے ذریعے کی جانے والی ادائیگی کے باعث پیش آنے والی مشکلات کا بھی خاتمہ ہوجائے گا۔

مزید : عرب دنیا