پاکستان میں جا من کا رقبہ 1228 ہیکٹر ز‘ پیداوار 7691ٹن ہے،زرعی ماہرین

پاکستان میں جا من کا رقبہ 1228 ہیکٹر ز‘ پیداوار 7691ٹن ہے،زرعی ماہرین

لاہور(نیوز رپورٹر) زرعی ماہرین کے مطا بق پاکستان میں جا من کا رقبہ 1228ہیکٹرز ہے اور پیداوا ر 7691ٹن ہے جبکہ صوبہ پنجا ب میں جا من کا رقبہ 1087ہیکٹر ز اور پیداوا ر 7140ٹن ہے ماہرین کے مطا بق جا من کا پھل غذائی اور طبعی اعتبا ر سے بہت اہمیت کا حامل ہے اطبا اسے ز یا بیطس میں مفید گر د ا نتے ہیں علا و ہ ازیں جا من کے پھل سے سر کہ و شر بت بھی بنایا جا تا ہے جو کہ جسم کی گر می اور ہاضمے کے علاج کیلئے مفید بتا یا جاتا ہے جامن کو مختلف قسم کی زمینوں میں لگا یا جا سکتا ہے لیکن ریتلی سخت تہ وا لی اور سیم ز د ہ زمین اس کی کا شت کیلئے غیر مو زوں ہے اچھی بڑھوتر ی اور پیداوار کیلئے گہر ی اور اچھے نکا س وا لی بھار ی میرا ز مین ز یا د ہ مو زوں ہے جسامت اور رنگت کے لحاظ سے جا من کی دو اقسام دیسی اور را ہ ہیں جامن کی افزائش بذریعہ بیج اور نباتاتی طریقے سے کی جا سکتی ہے۔

روٹ سٹا ک تیار کرنے کیلئے بیج جولا ئی اگست میں 22سے 30سینٹی میٹر فاصلے کی پٹریو ں پر 15سینٹی میٹر فاصلے پر لگا کر پانی دیں بیج 2سے 3ہفتوں میں ا گھ آتے ہیں تیار شد ہ سٹاک کو ا گست میں گملوں میں منتقل کریں۔

10۔سے 15روز کے بعد ان گملوں کو اعلی اقسام کے پو د ے کے ساتھ بغل گیر طریقہ سے پیو ند کریں با غ لگا نے کی صو رت میں 7سے 9میٹر کا فاصلہ ر کھیں ہو ا تو ڑ با ڑ لگا نے کی صو رت میں ا ن کو 5سے 7میٹر کے فاصلہ پر لگا ئیں پو د ے شا م کے وقت باغ میں منتقل کریں اور منتقلی کے فور ی بعد پانی لگا د یں موسم سر ما میں ایک ما ہ بعد ا لبتہ مو سم گر ما میں 2ہفتے بعد پانی د یں۔

مزید : کامرس


loading...