تنظیم الفجر کے زیر اہتمام جعلی ادویات کے حوالے سے آگاہی ورکشاپ

  تنظیم الفجر کے زیر اہتمام جعلی ادویات کے حوالے سے آگاہی ورکشاپ

لاہور (جنرل رپورٹر) تنظیم الفجر پاکستان اور ینگ انٹرنیشنل سوسائٹی،ٹیک کے زیر اہتمام سٹی ہسپتال ڈیفنس روڈ بحریہ ٹاؤن لاہور میں جعلی ادویات سے آگاہی ورکشاپ کا انعقاد کیا گیا جس کی صدارت عمران احمد شاہ نے کی جبکہ اکمل اویسی مہمان خصوصی تھے۔ مہمانان خاص میں روبینہ سحر، روما نور، صابر علی، قاسم علی تھے جبکہ ڈاکٹر اقبال، عثمان اسماعیل، محمد علی، حسنین شہادت، علی رضا، وسیم منیر، فیصل جوئیہ، انصر علی، مظہر حسین، مس راحیلہ، مبین ارشد، صداقت شیخ نے بطور خاص شرکت کی۔ عمران احمد شاہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دور دراز کے میڈیکل سٹورز پر ایکسپائر ادویات بھی عوام کو دی جاتی ہیں۔

اگر آپ ریپریاڈ بے پر ایکسپائر تاریخ چیک کرکے ادویات لیں تو یہ آپ کے لئے اچھا ہو گا۔ اکمل اویسی نے کہا کہ کئی میدیکل سٹورز پر عیر معیاری اور جعلی ادویات بھی بک رہی ہیں جو لیبارٹری سے ٹیسٹ بھی نہیں ہوتی اور رجسٹرڈ بھی نہیں ہوتی ایسی ادویات انسانی جان کے لئے بہت مضر ہوتی ہیں۔

ہمیشہ ڈاکٹر کی تجویز کر دہ ادویات ہی استعمال کی جانی چاہئیں۔ روبینہ سحر نے کہا کہ بعض لوگ ٹی وی کمرشل یا میگزین میں میڈیسن کی پبلسٹی دیکھ کر آن لائن میڈیسن منگوا لیتے ہیں مگر ان کو اس میڈیسن کے سائیڈ ایفکٹس کا پتہ نہیں ہوتا اس لئے ایسی میڈیسن استعمال کرنے سے گریز کریں۔روما نور نے کہا کہ بعض لوگ سمارٹ بننے کے لئے ڈاکٹر کے مشورہ کے بغیر ہی مختلف قسم کی میڈیسن استعمال کرتے ہیں جو نقصان دہ ہوسکتی ہیں قاسم علی نے کہا کہ بعض عاقبت نااندیش لوگوں نے راتوں رات امیر بننے کیلئے جعلی ادویات مارکیٹ میں پھیلا رکھی ہیں۔ہمیشہ باقاعدہ لیبارٹریز سے تصدیق شدہ اور لائسنس یافتہ ادویات ہی استعمال کرنی چاہئیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...