12کمپنیوں کیخلاف ڈگریاں جاری،اثاثے نیلام کرنے کاحکم  

    12کمپنیوں کیخلاف ڈگریاں جاری،اثاثے نیلام کرنے کاحکم  

لاہور(نامہ نگار)بینکنگ عدالتوں نے قرض کی کروڑوں روپے کی رقم بطورقرض واپس نہ کرنے پر12کمپنیوں کی نیلام کرنے کاحکم دے دیاہے۔ عدالت نے نیلامی کے لئے کورٹ آکشنربھی مقرر کردیئے ہیں،جنہوں نے اشتہاردیواروں پر آویزاں کردیئے ہیں۔بینکنگ کورٹ نے مالیاتی اداروں کی طرف سے قرض کی رقم واپس نہ کرنے پرنادھندہ 12کمپنیوں کے خلاف دعوے دائر کئے، جس پرعدالتوں نے ایک درجن کمپنیوں کے خلاف ڈگریاں جاری کرتے ہوئے ان کے اثاثے فوری نیلام کرکے بینکوں کی رقم واپس کرنے کاحکم دے دیا۔

عدالتوں نے باقاعدہ کورٹ آکشنر مقررکردیئے ہیں۔عدالتوں میں بینکوں کی جانب سے دائردعوؤں میں کہا گیاہے کہ مذکورہ کمپنیوں کے ڈائریکٹرزنے کاروبارکے لئے کڑوروں روپے کا قرض لیابعد میں رقم واپس نہیں کی،نادہندہ کمپنوں میں نیورحمت سٹیل ملز(بندروڈ)کے خلاف البرکہ بینک نے،پروجکشن اینڈکوگلبرگ کے خلاف سلک بینک، ایبی ٹیکسٹائل کارپوریشن گلبرگ کے خلاف فیصل بینک، طاہرولیداینڈکومصری شاہ کے خلاف سلک بینک، ہارون عثمان لمٹیڈ کے خلاف سلک بینک، سجادآٹوسٹوربندروڈکے خلاف الفلاح بینک اورجی ٹی روڈاور اَپ کولا کے خلاف این آئی بی بنک نے دعوئے دائر کررکھے ہیں۔

مزید : علاقائی


loading...