سٹاک ایکسچینج میں شدید مندی جاری، کے ایس ای 100انڈیکس 5ٍسال کی کم ترین سطح پر برقرار

سٹاک ایکسچینج میں شدید مندی جاری، کے ایس ای 100انڈیکس 5ٍسال کی کم ترین سطح پر ...

ٍ کراچی (اکنامک رپورٹر)پاکستان سٹاک ایکسچینج میں مندی کا تسلسل جاری کاروباری ہفتے کے دوسرے روز منگل کو بھی مندی رہی اورکے ایس ای 100 انڈیکس 31700پوائنٹس کی نفسیاتی حد سے بھی گرگیاجس سے سٹاک مارکیٹ گزشتہ پانچ سال کی سب سے کم ترین سطح پر آگئی۔،مندی کے نتیجے میں سرمایہ کاروں کے مزید 44 ارب74کروڑ روپے سے زائدڈوب گئے،کاروباری حجم گزشتہ روزکی نسبت12.02فیصدزائد جبکہ 50.95 فیصد حصص کی قیمتوں میں اضافہ ریکارڈ کیاگیا۔حکومتی مالیاتی اداروں مقامی بروکریج ہاؤسز سمیت دیگرانسٹیٹیوشن کی جانب سے سیمنٹ، توانائی،سٹیل، فوڈزاور بینکنگ سمیت منافع بخش سیکٹرکی نچلی سطح پر آئی ہوئی قیمتوں پر خریداری کے باعث کاروبار کا آغاز مثبت زون میں ہواٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر کے ایس ای100انڈیکس 31775پوائنٹس کی سطح پر بھی ریکارڈ کیاگیاتاہم کراچی کے مقامی سرمایہ کار گروپوں نے اعتماد کے فقدان اورمستقبل میں افراط زر اور شرح سود میں ممکنہ اضافے کے خدشات کے پیش نظرتازہ سرمایہ کاری کے بجائے حصص کی آف لوڈنگ کوترجیح دی جس کے نتیجے میں تیزی کے اثرات زائل ہوگئے اور دوران ٹریڈنگ کے ایس ای100انڈیکس 31485پوائنٹس کی نچلی سطح پر بھی دیکھا گیاتاہم بعدازاں غیرملکی سرمایہ کاروں کی جانب سے مارکیٹ میں سرمایہ کاری کی گئی، جس کے نتیجے میں مارکیٹ میں ریکوری آئی اور کے ایس ای100انڈیکس کی 31600کی حد بحال ہوگئی تاہم اتارچڑھاؤ کا سلسلہ سارادن جاری رہا۔ مارکیٹ کے اختتام پرکے ایس ای100انڈیکس 76.11پوائنٹس کمی سے 31658.12پوائنٹس پر بندہوا۔ماہرین سٹاک مارکیٹ کے مطابق میوچل فنڈز کے علاوہ سرمایہ کاری کے دیگر شعبوں کی جانب سے بھی فروخت کا رجحان غالب ہونے اور لسٹڈ کمپنیوں کی جانب سے مالیاتی نتائج توقعات کے مطابق نہ ہونے کی وجہ سے مارکیٹ میں سرمایہ کاروں کی دلچسپی گھٹتی جارہی ہے۔منگل کو مجموعی طورپر314کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا،جن میں سے160کمپنیوں کے حصص کے بھاؤمیں اضافہ،134کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں کمی جبکہ20کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں استحکام رہا۔سرمایہ کاری مالیت میں 44 ارب74 کروڑ86لاکھ 40 ہزار677روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی جبکہ سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت گھٹ کر63کھرب 60ارب54 کروڑ34 لاکھ 37ہزار 834 روپے ہوگئی۔دوسری طرف ملکی کرنسی مارکیٹوں میں غیرملکی کرنسیوں کے مقابلے میں روپے کی قدر میں اضافے کا رجحان رہااورانٹربینک مارکیٹ میں امریکی ڈالر کی قیمت 75پیسے کمی کے بعد 160روپے سے بھی نیچے آگئی۔فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کے جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق منگل کوانٹربینک مارکیٹ میں روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قیمت میں 75پیسے کمی ریکارڈ کی گئی، جس کے نتیجے میں امریکی ڈالر کی قیمت خرید160.55روپے سے گھٹ کر159.80روپے اورقیمت فروخت160.65روپے سے گھٹ کر159.90روپے ہوگئی۔اوپن کرنسی مارکیٹ میں پاکستانی روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالرکی قیمت خرید میں 1.00روپے اور قیمت فروخت میں 50پیسے کی کمی ریکارڈ کی گئی،جس کے نتیجے میں امریکی ڈالر کی قیمت خرید160روپے سے گھٹ کر159روپے اورقیمت فروخت160.50روپے سے گھٹ کر160.00روپے ہوگئی۔

سٹاک مارکیٹ 

مزید : صفحہ آخر


loading...