لاہور ہائیکورٹ کا حسیب وقاص شوگر ملز کی جائیداد نیلامی کا حکم

  لاہور ہائیکورٹ کا حسیب وقاص شوگر ملز کی جائیداد نیلامی کا حکم

 لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہورہائی کورٹ نے سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کے کزن کی زیر ملکیت حسیب وقاص شوگر ملز کی جائیداد کی نیلامی کا حکم دے دیاہے۔عدالت نے کورٹ آکشنرز سے ڈیفالٹر شوگر ملز کی جائیداد نیلام کرنے کے بعد 12 ستمبر کو رپورٹ بھی طلب کر لی ہے۔پنجاب بینک کی نیلامی کی درخواست میں بینک کے وکیل راشدین نواز نے موقف اختیار کیا کہ حسیب وقاص شوگر ملز مالکان نے شوگر ملز کی جائیدادیں رہن رکھوا کر کاروبار کے لئے قرض حاصل کیا اور قرض کے لئے حسیب وقاص شوگر ملز مالکان وقاص ریاض، زینب وقاص، حسیب الیاس، شہزادی الیاس نے گارنٹی دی تھی، حسیب وقاص شوگر ملز کے حصے دار میاں الیاس معراج اور یاسمین ریاض نے بھی قرض کے لئے گارنٹی دی تاہم قرض کی عدم ادائیگی پر ڈیفالٹر شوگر ملز کے خلاف 31 کروڑ 37 لاکھ 40 ہزار روپے کی ڈگری جاری ہو چکی ہے، کورٹ آکشنر ثمرہ ملک ایڈووکیٹ نے جائیداد نیلامی کا شیڈول اور تخمینہ رپورٹ عدالت میں پیش کی، عدالت نے وکلاء کے دلائل سننے کے بعدپنجاب بینک کی ڈیفالٹرحسیب وقاص شوگرملزایم ایم عالم روڈ گلبرگ پر واقع 3 کنال 16 مرلے کی جائیداد کی 31اگست کونیلامی کا حکم دیاہے،دریں اثناء پنجاب بینک نے درخواست دائر کی ہے کہ جس میں کہا گیاہے کہ اسے بھی نیلامی میں حصہ لینے کی اجازت دی جائے۔

شوگر ملز نیلامی

لاہور(کرائم رپورٹر)انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب کیپٹن (ر) عارف نواز خان نے کوئٹہ میں ہونیوالے دھماکے کے بعد پنجاب بھر میں سکیورٹی ہائی الرٹ کرنے کا حکم جاری کر دیا ہے۔ آئی جی پنجاب نے کہا کہ پولیس دہشت گردی کے خلاف جنگ میں فرنٹ لائن سولجر کا کردار ادا کر رہی ہے اورکوئٹہ میں ہونے والے دھماکے میں بھی پولیس کے بہادر جوانوں نے شہریوں کے تحفظ کا فریضہ انجام دیتے ہوئے جام شہادت نوش کیا ہے اللہ پاک شہیدوں کے درجات بلند کرے،زخمیوں کو جلد صحت دے اور شہدا کے لواحقین کو صبر جمیل عطا کرے۔علاوہ ازیں آئی جی عارف نواز نے ضلع نارووال کی تحصیل شکر گڑھ میں پولیس اہلکاروں کے شہری پر تشدد کے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی پی اونارووال ذوالفقار احمدسے رپورٹ طلب کی تھی جس پر کارروائی کرتے ہوئے ڈی پی او نارووال نے رپورٹ آئی جی پنجاب کو پیش کر دی ہے۔تفصیلات کے مطابق تھانہ کوٹ نیناں کے ایس ایچ او محمد اکرم اوردیگر اہلکاروں نے ایک نجی ڈیرہ پر رکھ کر شہری پر تشدد کیا تھا جس پر آئی جی پنجاب نے نوٹس لیتے ہوئے واقعہ کی رپورٹ طلب کی تھی اور ذمہ داراہل کاروں کے خلاف کاروائی کی ہدایت کی تھی۔آئی جی پنجاب کی ہدایات کے مطابق مقامی ڈی پی او نے تھانہ کوٹ نیناں کے ایس ایچ او محمد اکرم او ردیگر تین اہلکاروں کے قصور وار ثابت ہونے پر ان کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے مقدمہ درج کر کے انہیں گرفتار کر لیا ہے۔

آئی جی پنجاب 

مزید : صفحہ آخر


loading...