عالمی برادری مقبوضہ کشمیرمیں خواتین اور بچون کے حقوق کا تحفظ یقینی بنائے: شیریں مزاری

  عالمی برادری مقبوضہ کشمیرمیں خواتین اور بچون کے حقوق کا تحفظ یقینی بنائے: ...

اسلام آباد (این این آئی)وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق ڈاکٹر شیریں مزاری نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیرکو پاکستان کی خارجہ پالیسی میں مرکزی حیثیت حاصل ہے، بین الاقوامی برادری مسئلہ حل کرانے کے لئے بھارت پر دباؤ ڈالنے کے ساتھ مقبوضہ کشمیر میں خواتین اور بچوں کے حقوق کے تحفظ کو یقینی بنائے، ملک میں انسانی حقوق کے تحفظ کیلئے پر عزم ہیں، زبردستی مذہب کی تبدیلی کو روکنے کے لئے ٹاسک فورس فعال کام کر رہی ہے، خواجہ سراؤں کے (بقیہ نمبر37صفحہ7پر)

حقوق کے لئے بنائے گئے قوانین پر سختی سے عمل درآمد کیا جا رہا ہے، یورپی ممالک مسلمانوں کے حقوق کے تحفظ کو یقینی بنائیں۔ وہ گزشتہ روز یورپی پارلیمنٹ کے اراکین رچرڈ کاربیٹ، ارینا وان، شفق محمد اور جموں کشمیر اینڈ سیلف ڈیٹرمینیشن موومنٹ انٹرنیشنل کے چیئرمین راجہ نجابت حسین کے ساتھ ملاقات میں گفتگو کررہی تھیں۔ ڈاکٹر شیریں مزاری نے وفد کو انسانی حقوق کے تحفظ کے حوالے سے پاکستان میں کئے جانے والے اقدامات کے حوالے سے بتایا کہ ملک میں انسانی حقوق میں نہ صرف موجود قوانین پر عمل درآمد کو یقینی بنایا جا رہا ہے بلکہ جہاں ضرورت ہے نئے قوانین بھی بنائے جا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم چائلڈ پروٹیکشن ایکٹ پر سختی سے عمل کر رہے ہیں اور وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں وزارت کے زیر انتظام ایک چائلڈ پروٹیکشن سینٹر بھی چل رہا ہے۔ اس کے علاوہ جیونائل ایکٹ پر بھی سختی سے عمل کیا جا رہا ہے اور خیبر پختونخوا میں چار جیونائل کورٹس بنائی گئی ہیں۔ پنجاب میں ایک جبکہ دیگر صوبوں میں جیونائل کورٹس کے قیام پر کام جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ بچوں پر جنسی تشدد کے حوالے سے بھی ایک آگاہی پروگرام شروع کیا گیا ہے تاکہ ملک میں جنسی تشدد کا شکار ہونے والے بچوں کو بچایا جا سکے اور اس حوالے سے ہم مختلف تعلیمی اداروں میں بھی کمسن بچوں سے ملاقاتیں کر کے انہیں آگاہی فراہم کر رہے ہیں۔ وفاقی وزیر نے وفد کو بتایا کہ خواتین کے وراثتی تحفظ کے لئے پارلیمنٹ میں بل پیش کیا جا چکا ہے اور اس پر تیزی سے کام جاری ہے۔ اس کے علاوہ انسانی حقوق کی خلاف ورزی کو فوری طور پر روکنے کے لئے ہم نے 1099 ہیلپ لائن قائم کر رکھی ہے جس سے ملک بھر سے شکایات موصول ہوتی ہیں اور شکایت کنندگان کو ملک کے تمام اضلاع میں رضاکارانہ طور پر قانونی معاونت فراہم کرنے کے لئے وکلاء کی ٹیم کام کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم صحافیوں کے حقوق کے لئے بھی جلد ہی ایک جامع قانون لا رہے ہیں تاکہ صحافی برادری کو تحفظ فراہم کیا جا سکے۔ اقلیتوں کے حقوق پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کی کوشش ہے کہ ملک میں اقلیتوں کے حقوق کو تحفظ فراہم کیا جائے اور انہیں مکمل مذہبی آزادی حاصل ہو۔ انہوں نے کہا کہ میں توقع کرتی ہوں کہ یورپی ممالک میں بسنے والے مسلمانوں کو بھی تحفظ فراہم کیا جائے اور جہاں پر مسلمانوں کو مسائل درپیش ہیں انہیں ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ جبری گمشدگی کے مسئلہ پر تمام اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ مشاورت کے بعد بل کا مسودہ وزارت قانون کو بھیجا جا چکا ہے اور اس مسئلہ کو جلد حل کرا لیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ کم عمری میں شادی کی روک تھام کے حوالے سے اقدامات کئے جا رہے ہیں۔ 

شیریں مزاری 

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...