ڈاﺅ یونیورسٹی میں ورلڈ ہیپاٹائٹس ڈے کے سلسلے میں آگہی واک

ڈاﺅ یونیورسٹی میں ورلڈ ہیپاٹائٹس ڈے کے سلسلے میں آگہی واک

کراچی (پ ر)ڈاﺅ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے وائس چانسلر پروفیسر محمد سعید قریشی نے کہا ہے کہ بحیثیت قوم ہم ایک مشکل دوراہے پر کھڑے ہیں، اب درست سمت میں اقدامات نہ کیے گیے تو ہم کینسر کا سبب بننے والے ہیپاٹائٹس کے خاتمے کا موقع ہا تھ سے گنوا دینگے، ورلڈ ہیپاٹائٹس ڈے دوہزار انیس کے موقع پر ایک مرتبہ پھر پوری قوم سے انفرادی طور پر کسی تنظیم کے ذریعے ، نجی اور سرکاری سطح پر سب متحد ہو کر ہیپاٹائٹس کے خاتمے کے لیے تحریک کو تیز کر دیں، بس یہی ایک طریقہ ہے جس کے ذریعے ہم 2030تک وائرل ہیپاٹائٹس کا خاتمہ کر سکتے ہیں، یہ بات انہو ںنے ورلڈ ہیپاٹائٹس ڈے (28جولائی 2019) کے حوالے سے نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف لیور اینڈ گیسٹرو انٹیسٹائنل ڈیزیز (نلگڈ)کے زیرِ اہتمام اوجھا کیمپس مین او پی ڈی سیمینار ھال میں مریضوں اور جونیر ڈاکٹرز کے منعقد ہ آگہی سیمینار سے بہ طور مہمانِ خصوصی خطاب کرتے ہوئے کہا ، اس موقع پر یونیورسٹی کے رجسٹرار اور ماہرین امراضِ جگر پروفیسر امان اللٰہ عباسی ،نکگڈ کے ڈائریریکٹر ڈاکٹر ندیم حسن ، ڈاکٹرطیب عثمانی، ڈاکٹر حفیظ اللٰہ شیخ ، ڈاکٹر عاطف عزیز نے بھی مقالے پیش کئے ،عوامی آگہی سیمینار سے قبل ٰیونیورسٹی کے چانسلرپروفیسر محمد سعید قریشی کی قیادت میں ڈاﺅ اسپتال کے مین گیٹ اور او پی ڈی بلاک تک واک کی قیادت کی ، جس میں یونیورسٹی کی پرو وائس چانسلر پروفیسر زرناز واحد نے شرکت کی، عوامی آگہی سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے پروفیسر محمد سعید قریشی نے کہا کہ ہیپاٹائٹس کے خاتمے کے لیے پوری دنیا میں آگہی ہے، کیونکہ اس مرض نے دنیا بھر میں تباہی پھیلائی ہے

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...