عید قربان کے بعد اے پی سی کا اجلاس ہوگا، عبدالجلیل جان

عید قربان کے بعد اے پی سی کا اجلاس ہوگا، عبدالجلیل جان

  

صوابی(بیورورپورٹ)جمعیت علماء اسلام صوبہ خیبر پختونخوا کے سیکرٹری اطلاعات الحاج عبدالجلیل جان نے کہا ہے کہ عید الاضحی کے بعد مرکزی سطح پر جے یو آئی سمیت تمام اپوزیشن جماعتوں کا آل پارٹیز کانفرنس منعقد ہو گا جس میں پی ٹی آئی حکومت کی غیر سنجید ہ پالیسیوں کے خلاف لائحہ عمل طے کیا جائیگا ان خیالات کااظہار انہوں نے دورہ صوابی کے موقع پر میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کر تے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کو بین الا قوامی ایجنڈے کے مطابق اقتدار میں لایا گیا ہے دو سال دور حکومت کے دوران پی ٹی آئی نے ملک کے عوام کو بد ترین مہنگائی، ناجائز ٹیکسز،بے روزگاری اور بد امنی کے سوا کچھ نہیں دیا اور سارا ہدف غریب اور بے روزگار عوام ہے کیونکہ حکومت نے اشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں کئی سو گنا اضافہ کر کے غریب عوام کا کچومر نکال دیا انہوں نے کہا کہ این ایف سی ایوارڈ اور آٹھارویں تر میم کے خلاف پی ٹی آئی حکومت سازش کر رہی ہے این ایف سی ایوارڈ 2010فارمولے کے مطابق طے شدہ معاملہ ہے نئے صوبوں کے انضمام کے بعد صوبہ خیبر پختونخوا کا حصہ زیادہ ہونا چاہئے لیکن حکومت چھوٹے صوبوں کے وسائل میں کمی کر رہی ہے۔ صوبے کو بجلی رائلٹی اور دیگر حقوق اور اختیارات نہیں دیئے جارہے ہیں جس کی وجہ سے ہمارے صوبے میں سرکاری ملازمین کی تنخواہیں روکنے کے علاوہ نئے ملازمین کی تقرریاں بھی روکے گی۔ اور اسی طرح صوبائی اسمبلی بجٹ پیش کرنے کے قابل بھی نہیں رہے گا اسی طرح آٹھارویں تر میم میں صوبوں کو دیئے گئے اختیارات ختم کرنے کی سازش بھی پی ٹی آئی حکومت کر رہی ہے صوبوں کے اختیارات میں کمی صوبائی حقوق پر کاری ضرب ہے اس حوالے سے پنجاب، سندھ اور دیگر صوبوں میں آل پارٹیز کانفرنسز کا انعقاد کیا گیا ہے انہوں نے کہا کہ جے یو آئی بلدیاتی انتخابات میں بھر پور انداز میں حصہ لے گی اس حوالے سے صوبائی قیادت نے صوبے کے اضلاع کے دورے شروع کر دیئے ہیں تمام اضلاع میں نیبر ہوڈ اور ویلج کونسل کی سطح پر پارٹی کو منظم کرنے کے علاوہ تنظیم سازی ہو گی تاکہ بھر پور انداز میں بلدیاتی انتخابات میں کامیابی حاصل ہو سکے انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت نے اگست 2021تک بلدیاتی انتخابات موخر کر کے اپنی ناکامی کا اعتراف کر لیا ہے لیکن جے یو آئی پی ٹی آئی کو بلدیاتی انتخابات سے راہ فرار اختیار کرنے نہیں دئے گی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -